مفاہمت کی پہلی یادداشت شاہراہ ریشم کی اقتصادی پٹی اور اور اکیسویں صدی کے سلک روڈ میری ٹائم منصوبے سے متعلق ہے۔

13 مئی 2017 (14:47)
0

پاکستان اور چین نے آج بیجنگ میں مختلف شعبوں میں تعاون کے کئی معاہدوں پر دستخط کئے ہیں۔اس سلسلے میں مفاہمت کی پہلی یادداشت شاہراہ ریشم کی اقتصادی پٹی اور اور اکیسویں صدی کے سلک روڈ میری ٹائم منصوبے سے متعلق ہے۔
ریلوے لائن ML-1 میں بہتری لانے اور حویلیاں ڈرائی پورٹ کے قیام سے متعلق مفاہمت کی ایک اور یادداشت پر دستخط کئے گئے۔دونوں ملکوں کے درمیان گوادر پورٹ اور ایسٹ بے ایکسپریس وے کے لئے تین ارب چالیس کروڑ یوآن مالیت کے منصوبوں کے لئے اقتصادی اور تکنیکی تعاون کے تین معاہدوں پر دستخط کئے گئے۔
وزیراعظم نواز شریف اور ان کے چینی ہم منصب Li Keqiang دستخطوں کی تقریب میں موجود تھے۔

اس سے قبل وزیراعظم نواز شریف نے بیجنگ میں اپنے چینی ہم منصب لی کی چیانگ سے بھی ملاقات کی۔وزیراعظم نے چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت فوری نوعیت کے منصوبوں کی تکمیل کے لئے پاکستان کے عزم کااعادہ کیا ہے۔
نواز شریف نے چینی وزیراعظم کو بتایا کہ چاروں وزرائے اعلیٰ سمیت پاکستانی وفد بھی فورم میں شرکت کرے گا،انہوںنے کہا کہ اس سے ظاہر ہوتا ہے کہ پوری قوم چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے پر یکساں موقف رکھتی ہے۔