مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تعصب پرمبنی ہے:مریم اورنگزیب
13 جولائی 2017 (07:51)
0

اطلاعات کی وزیر مملکت مریم اورنگزیب نے کہا ہے کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم تعصب پرمبنی ہے اور شریف خاندان نے ابتدا سے ہی اس پر تحفظات اور عدم اعتماد کا اظہار کیا تھا۔
انہوں نے اسلام آباد میں رکن قومی اسمبلی دانیال عزیز کے ہمراہ ایک پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ دو سوچھپن صفحات پر مبنی رپورٹ میں وزیراعظم نوازشریف کے خلاف بدعنوانی کے کسی مقدمے کا کوئی ذکر نہیں۔
انہوں نے کہا بلکہ رپورٹ سے اس حقیقت کی توثیق ہوتی ہے کہ نوازشریف نہ کبھی بدعنوانی میں ملو ث رہے اور نہ ملک کے وزیراعظم اور پنجاب کے وزیراعلیٰ کی حیثیت سے اپنے دور اقتدار میں کبھی کسی قسم کی رشو ت لی۔
وزیر مملکت نے امید ظاہر کی کہ شریف خاندان کی قانونی ٹیم مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی رپورٹ کا تفصیلی جائزہ لے رہی ہے اوراس کی جانب سے رپورٹ کو چیلنج کئے جانے کے بعد سپریم کورٹ اس میں خود ساختہ جھوٹ کو خود مسترد کردے گی۔
مریم اورنگزیب نے کہا کہ اگر مفروضات امکان اور شکوک وشبہات جیسے الفاظ کو رپورٹ سے حذف کردیا جائے تو جو کچھ باقی بچے گا وہ ایک افسانوں کا مجموعہ ہوگا۔
انہوں نے کہا کہ تحقیقاتی رپورٹیں قیاس آرائیوں اور مفروضوں پر نہیں بلکہ ٹھوس اور ناقابل تردید شواہد پر مبنی ہوتی ہیں جو مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی رپورٹ میں موجود نہیں ہیں۔
وزیر مملکت نے کہا کہ جے آئی ٹی کی رپورٹ محض شریف خاندان کے کاروبار سے متعلق ہے اور ہم سپریم کورٹ کی جانب سے پوچھے گئے سوالات کے جواب دینے میں ناکام ہوگئی ہے۔
دانیال عزیز نے حزب اختلاف کی جانب سے شور شرابے کے حوالے سے کہا کہ وہ ایسی رپورٹ پرکیوںشور مچارہے ہیں جو نامکمل اور غیر فیصلہ کن ہے۔