وہ عالمی بنک کے کنٹری ڈائریکٹر راشد بن مسعود سے باتیں کر رہے تھے جنہوں نے  پیر کے روز ان سے اسلام آباد میں ملاقات کی۔

13 جنوری 2014 (20:59)
0

صدر ممنون حسین نے عالمی بینک سے کہا ہے کہ وہ پاکستان کے بجلی اور توانائی کے مسائل حل کرنے میں مدد دے۔
وہ عالمی بنک کے کنٹری ڈائریکٹر راشد بن مسعود سے باتیں کر رہے تھے جنہوں نے  پیر کے روز ان سے اسلام آباد میں ملاقات کی۔
صدر نے کہا کہ پاکستان کو توانائی اور پانی کے شدید بحران کا سامنا ہے جس سے ملکی معیشت بری طرح متاثر ہو رہی ہے۔
ممنون حسین نے کہا کہ عالمی بنک کو پاکستان میں توانائی اور پانی کے منصوبوں کے لئے   مالی امداد پر غور کرنا چاہئیے۔
انہوں نے پاکستان کے ساتھ عالمی بنک کے اشتراک عمل کو سراہا اور یقین ظاہر کیا کہ بنک ترقیاتی منصوبوں کے لئے امداد کا سلسلہ جاری رکھے گا۔
راشد بن مسعود نے صدر کو اگلے پانچ سال کے لئے عالمی بنک کی نئی شراکت داری کی    حکمت عملی کے بارے میں بتایا۔
انہوں نے صدر کو بینک کے مختلف منصوبوں کے بارے میں بھی بتایا جن کا مقصد پاکستان کی سماجی و اقتصادی ترقی ہے۔


 دریں اثناصدر ممنون حسین نے انصاربرنی ٹرسٹ کے چیئرمین انصاربرنی سے باتیں کرتے ہوئے ملک میں انسانی حقوق کے فروغ کے لئے حکومت کے عزم کا اعادہ کیا۔
انہوں نے کہا کہ انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں سے نمٹنے اور انسانی حقوق کے مقدمات اور ان پر پیش رفت پر نظر رکھنے کے لئے ایوان صدر میں انسانی حقوق کا ایک سیل بھی قائم کیا گیاہے۔
بچوں کے حقوق کے بارے میں بات کرتے ہوئے صدر نے ملک کے مختلف حصوں خصوصاً فاٹا میں پانچ سال سے کم عمر بچوں میں پولیو وائرس کے پھیلائوکی روک تھام کے لئے حکومت کی کوششوں پر روشنی ڈالی۔
انصار برنی نے یقین دلایا کہ ان کا ٹرسٹ انسانی حقوق سے متعلق امور پر ہر ممکن تعاون جاری رکھے گا۔
پاکستان نیشنل ہارٹ ایسوسی ایشن کے وفد سے باتیں کرتے ہوئے صدر نے قیمتی انسانی جانیں بچانے کیلئے امراض قلب سے بچاؤ کے جامع پروگرام کی ضرورت پر زور دیا۔
صدر نے دل کے مہلک امراض پر قابو پانے سے متعلق پاکستان نیشنل ہارٹ ایسوسی ایشن کی کوششوں کو سراہا۔
ایسوسی ایشن کے چیئرمین ریٹائرڈ میجر جنرل محمد اشرف خان کی قیادت میں وفد نے صدر کو ایسوسی ایشن کے مقاصد کے بارے میں بتایا۔