Wednesday, 17 July 2019, 05:25:07 am
ایوان کی کمیٹیوں کی تشکیل پارلیمنٹ کے لئےانتہائی اہم معاملہ ہے:شاہ محمود قریشی
December 13, 2018

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے جمہوریت اور پارلیمانی اقدار کے وسیع تر مفاد میں یہ بات تسلیم کی ہے کہ حزب اختلاف پبلک اکاونٹس کمیٹی کا چیئرمین منتخب کر سکتی ہے۔ آج قومی اسمبلی میں اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت کھلے دل سے یہ فیصلہ قائد حزب اختلاف پرچھوڑتی ہے کہ وہ اپنی پسند سے اس عہدے کے لئے نامزدگی کریں تاہم اگر وہ خود کو اس عہدے کے لئے مناسب سمجھتے ہیں تو حکومت اس پر کوئی اعتراض نہیں کرے گی۔ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ ایوان کی کمیٹیوں کی تشکیل پارلیمنٹ کے لئے ایک انتہائی اہم معاملہ ہے تاکہ اسے موثر طورپر فعال کیا جاسکے۔ انہوں نے کہا کہ قائد حزب اختلاف کی ، چیئرمین پبلک اکاونٹس کمیٹی کی حیثیت سے تعیناتی کے معاملے پر یہ مسئلہ ابھی تک رکا ہوا ہے۔انہوں نے کہا قائد حزب اختلاف قومی احتساب بیورو کے مقدمات میں پھنسے ہوئے ہیں اور یہ مقدمات موجودہ حکومت نے قائم نہیں کئے ۔شاہ محمود قریشی نے کہاکہ اس کے باوجود ہم نے اس تعطل کے حل کیلئے ہر کوشش کی ہے۔ انہوں نے کہا کہ یہ ایوان تمام سیاسی جماعتوں پرمشتمل ہے اور ہر ایک کو اس ایوان کے تقدس کیلئے اپنا کردار ادا کرنا چاہیے۔ انہوں نے حزب اختلاف کو پیش کش کی وہ ذاتی اور پارٹی مفادات کو بالائے طاق رکھ کر قوم اور جمہوری اقدار کے وسیع تر مفاد کیلئے آگے آئیں اور مل کرکام کریں۔

قومی اسمبلی میں قائد حزب اختلاف شہباز شریف نے حکومت کے اس اقدام کو سراہتے ہوئے کہاکہ قائد حزب اختلاف کے پاس پبلک اکاونٹس کمیٹی کی سربراہی گزشتہ دو حکومتوں کے ادوار کی روایت رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ اس اقدام سے جمہوری اقدار اور روایات کو فروغ ملے گا اور پارلیمنٹ مزید مستحکم ہوگی۔ شہبازشریف نے نیب کے کردار پر تنقید کی اورکہا کہ یہ عام فہم ہے کہ نیب کی طرف سے احتساب کا عمل انتہائی مخصوص افراد کو نشانہ بنانا ہے۔ ایوان کا اجلاس کل صبح ساڑھے دس بجے تک ملتوی کردیا گیا ۔