Thursday, 09 July 2020, 07:21:17 am

مزید خبریں

 
جنوبی ایشیا میں امن و استحکام کا راستہ' کشمیر سے گزرتاہے، مقررین سیمینار
January 13, 2020

فائل فوٹو

جموں میں ایک سیمینار کے مقررین نے کہا ہے کہ جنوبی ایشیاء میں پائیدار امن و سلامتی کے قیام کا راستہ کشمیر سے گزرتا ہے ۔

سیمینار کا اہتمام جموں وکشمیر پیپلز موومنٹ اور فورم فار پیس نے کیا۔مقررین نے بھارتی حکومت کو مقبوضہ علاقے میں تحریک آزادی کو دبانے کی ظالمانہ پالیسی جاری رکھنے کے خلاف خبردار کیا۔

اس موقع پر جموں وکشمیر پیپلز موومنٹ کے چیئرمین میر شاہد سلیم نے کہاکہ جموں وکشمیر کی خصوصی حیثیت کی منسوخی کے بھارتی حکومت کے غیر قانونی اور غیر آئینی اقدامات کے ذریعے مقبوضہ علاقے کی متنازعہ حیثیت کو کبھی تبدیل نہیں کیا جاسکتا ۔

مقبوضہ کشمیرمیں ہزاروں افراد نے شدیدبارشوں، برف باری اورپابندیوں کی پرواہ نہ کرتے ہوئے گزشتہ روز شہید ہونیوالے تین کشمیری نوجوانوں کی نماز جنازہ میں شرکت کیلئے ضلع پلوامہ کے قصبے ترال میں اکٹھے ہوگئے ۔

ادھر بھارتی فوجیوں نے سرینگر، بڈگام ، کپواڑہ ، بانڈی پورہ ، بارہمولہ ، اسلام آباد، شوپیاں ، پلوامہ ، کولگام اور راجوری کے اضلاع میں جاری تلاشی اور محاصرے کی کارروائیوں کے دوران لوگوں کو تشدد کا نشانہ بنایا اور انہیں گھروں سے باہر کھلے آسمان تلے کھڑے رہنے پر مجبور کیا۔ فوجیوں نے اسلام آباد ضلع کے علاقے سرنال میں راہ گیروں پر بھی تشدد کیا۔

فرانس کی حکومت نے ایک بیان میں کہا کہ ان کا ملک کشمیر کی صورتحال پر گہری نظر رکھے ہوئے ہے اور حال ہی میں فرانس کے صدر ایمانول میکخوان اور بھارتی وزیر اعظم نریندر مودی کے درمیان ٹیلی فون پرگفتگو میں اس مسئلے پر تبادلہ خیا ل کیا گیا ۔