پاکستان، امریکہ کا افغانستان اور جنوبی ایشیا کے بارے میں امریکی حکمت عملی کے تناظر میں دوطرفہ تعلقات کا جائزہ
12 اکتوبر 2017 (20:47)
0

پاکستان اور امریکہ نے دوطرفہ تعاون اور خطے میں امن کی خاطر باہمی دلچسپی کے تمام امور پر بات چیت جاری رکھنے پراتفاق کیا ہے۔
یہ اتفاق رائے جمعرات کے روز اسلام آباد میں وفد کی سطح پربات چیت کے دوران ہوا۔
امریکی ایجنسیوں کے وفد کی قیادت صدر کے نائب معاون اور جنوبی ایشیا کے بارے میں قومی سلامتی کونسل کی سینئر ڈائریکٹر مزلیزا کرٹس نے کی۔
پاکستانی وفد کی سربراہی سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے کی ۔
فریقین نے افغانستان اور جنوبی ایشیاء کے بارے میں امریکی حکمت عملی کے تناظر میں تعلقات کی صورتحال کاجائزہ لیا ۔
افغانوں کی سربراہی اوران کی سرپرستی میں سیاسی مذاکراتی حل کیلئے پاکستان کے موقف کا اعادہ کرتے ہوئے سیکرٹری خارجہ نے افغان تنازعے کے پرامن حل کیلئے تمام علاقائی اور دوطرفہ لائحہ عمل میں پاکستان کی تعمیری شمولیت کااعادہ کیا۔
بات چیت میں کہاگیا کہ پاکستان کی جانب سے جامع مذاکرات کی مسلسل پیشکش کے باوجود بھارت کے انکار کے علاقائی استحکام پرمنفی اثرات مرتب ہوئے ہیں۔
امریکی وفد نے افغانستان اور خطے میں امن اور استحکام کے مشترکہ مقاصد کے حصول کیلئے دوطرفہ تعلقات کو نئی جہت دینے کی اہمیت پرزوردیا ۔