روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی میانمار کا سوچا سمجھا منصوبہ ہے،اقوام متحدہ
12 اکتوبر 2017 (20:22)
0

اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ میانمار روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی کا ذمہ دار ہے اور یہ اس کا طے شدہ اور سوچا سمجھا منصوبہ ہے۔
اقوام متحدہ کے انسانی حقوق کے دفتر کی طرف سے جاری کردہ ایک رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ روہنگیا مسلمانوںکے خلاف حملے اور بڑے پیمانے پر دیہات کو نذر آتش کرنے کے واقعات خوف وہراس پیداکرنے کی سازش کی عکاسی کرتے ہیں اور اس کا مقصد گھر بار چھوڑ کر جانے والوں کوواپس آنے سے روکنا ہے۔
ادھر جاپان میں میانمار کے سفیرThurain Thant Zin نے ملک میں روہنگیا مسلمانوں کی نسل کشی کے واقعات کی تردید کی ہے حالانکہ وہاں پرتشدد واقعات کے باعث پانچ لاکھ سے زائد روہنگیامسلمان ملک چھوڑ کر جاچکے ہیں۔
سفیرنے آج ٹوکیو میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ان کی حکومت ملک چھوڑ کر جانے والوں کی بحالی میں مدد دینے کو تیار ہے۔
لاکھوں کی تعداد میں روہنگیا مسلمان اپنا گھر بار چھوڑ کر ہجرت کرگئے ہیں او ر اقوام متحدہ نے اسے بدترین نسل کشی قراردیا ہے۔