بھارتی فوجیوں کا جامع مسجد سرینگر کا مسلسل محاصرہ، حریت رہنمائوں کی مذمت
12 نومبر 2016 (21:36)
0

مقبوضہ کشمیر میں مشترکہ حریت قیادت نے بھارتی فوجیوں کی طرف سے جامع مسجد سرینگر کے مسلسل محاصرے کی شدید مذمت کی ہے۔
سید علی گیلانی ، میرواعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل حریت قیادت نے ایک مشترکہ بیان میں اس کارروائی کو مسلمانوں کے مذہبی معاملات میں براہ راست مداخلت قرار دیا۔
انہوں نے سکھ برادری کی اپیل پر انکے مذہبی تہوار کے تناظر میں پیر کے روز مجوزہ لا ل چوک مارچ کی منسوخی کا بھی اعلان کیا۔
حریت رہنمائوں نے کہا کہ کشمیری مسلمان مذہبی آزادی ، بھائی چارے اور فرقہ وارانہ ہم آہنگی کی سنہری روایات پر یقین رکھتے ہیں۔
دریں اثناء مقبوضہ علاقے میںبھارتی فورسز کے ہاتھوں معصوم شہریوں کے قتل اور دیگر مظالم کے خلاف وادی کشمیر میں آ ج مسلسل 127ویں روز بھی ہڑتال کی وجہ سے معمولات زندگی مفلوج رہے۔
جموں وکشمیر سوشل پیس فورم کے چیئرمین دیوندر سنگھ نے ڈوڈہ میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وادی کشمیر میں بھارتی پولیس اورفوج کی ریاستی دہشت گردی کی شدید مذمت کی۔
انہوں نے جموں میں دلت آبادی کو دہشت کا نشانہ بنانے کی بھی مذمت کی۔