ٹیکسٹائل صنعتوں کے وزیر عباس خان آفریدی نے وقفہ سوالات کے دوران ایوان کو بتایا کہ نئی پالیسی اس سال تیس جون تک تیار ہو جائے گی۔

 قومی اسمبلی:نئی ٹیکسٹائل پالیسی کی تیاری حتمی مراحل میں
12 مئی 2014 (20:12)
0

قومی اسمبلی کو پیر کے روز بتایا گیا کہ ٹیکسٹائل کی نئی پالیسی کو حتمی شکل دی جارہی ہے جس میں تیار مصنوعات اور برآمدات کے فروغ پر خصوصی توجہ دی جائے گی۔
ٹیکسٹائل صنعتوں کے وزیر عباس خان آفریدی نے وقفہ سوالات کے دوران ایوان کو بتایا کہ نئی پالیسی اس سال تیس جون تک تیار ہو جائے گی۔
انہوں نے کہا کہ پالیسی کے اہم ترین مقاصد میں سے ایک ٹیکنالوجی کو بہتر بنانے کی سکیم ہے تاکہ شٹل کے بغیر چلنے والی کھڈیوں اور ملبوسات کے شعبوں میں سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کی جاسکے۔
وفاقی وزیر نے ایوان کو بتایا کہ کپڑے کی برآمدات میں موجودہ مالی سال کے دوران گزشتہ سال کے اسی عرصے کے مقابلے میں سات فیصد اضافہ ریکارڈ کیا گیا۔
بیرون ملک مقیم پاکستانیوں اور انسانی وسائل کی ترقی کے وزیر پیر سید صدر الدین شاہ راشدی نے ایوان کو بتایا کہ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی فائونڈیشن نے ان پاکستانیوں کی فلاح و بہبود کیلئے کئی اقدامات کیے ہیں۔
انہوں نے کہاکہ قومی شناختی کارڈز کے اجرا کے لئے او پی ایف ہیڈ کوارٹرز اسلام آباد میں نادرا سوئفٹ سینٹر قائم کیا گیا ہے۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ بلوچستان کے ضلع آواران میں بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کے زلزلے سے متاثرہ خاندانوں میں 23 لاکھ روپے تقسیم کیے گئے ہیں۔
انہوں نے کہا کہ سیالکوٹ اور تربت کے ہوائی اڈوں پر بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کیلئے سہولت مراکز کیے گئے ہیں۔
سائنس اور ٹیکنالوجی کے وزیرزاہد حامد نے وزیر خارجہ کی طرف سے ایک سوال کے جواب میں ایوان کو بتایا کہ منقسم خاندانوں کی سہولت کیلئے بھارت کے شہر ممبئی میں قونصل خانہ کھولنے کی کوششیں جاری ہیں۔
انہوں نے کہاکہ کھوکھراپار مونا بائو کا زمینی راستہ ضروری بنیادی ڈھانچے کو بہتر بنانے اور سڑکوں کی تعمیر کے بعد کھول دیا جائے گا۔