پنجاب کے وزیر اعلیٰ شہباز شریف نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ توانائی کے ان منصوبوں کے لئے درگار گرڈ اور ٹرانسمیشن لائنز کی بروقت تکمیل یقینی بنائیں

وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی صدارت میں اجلاس میں جاری منصوبوں کا جائزہ لیا گیا
12 مئی 2014 (18:38)
0

پنجاب کے وزیر اعلیٰ شہباز شریف کی صدارت میں پیر کے روز لاہور میں اعلیٰ سطح کا اجلاس ہوا جس میں توانائی کے جاری منصوبوں پر پیش رفت کا جائزہ لیا گیا۔

پانی اور بجلی کے وزیر خواجہ محمد آصف نے بھی اجلاس میں شرکت کی۔ شہباز شریف نے اس موقع پر کہا کہ پاکستان مسلم لیگ نون کی حکومت نے توانائی کے تمام منصوبوں پر کام کی رفتار تیز کر دی ہے تاکہ توانائی بحران پر جلد از جلد قابو پایا جاسکے۔

انہوں نے کہا کہ نندی پور بجلی کے منصوبے کا افتتاح اس ماہ کے آخر تک کر دیا جائے گا۔

وزیر اعلیٰ نے کہا کہ بہاولپور میں قائداعظم سولر پارک میں ایک ہزار میگاواٹ کے شمسی توانائی سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبے شروع کیے جائیں گے جبکہ اس ماہ کے آخر میں ساہیوال میں کوئلے سے چلنے والے دو بجلی گھروں کا سنگ بنیاد رکھا جائے گا جس میں سے ہر ایک کی پیداواری صلاحیت چھ سو ساٹھ میگاواٹ ہوگی۔

انہوں نے متعلقہ حکام کو ہدایت کی کہ توانائی کے ان منصوبوں کے لئے درگار گرڈ اور ٹرانسمیشن لائنز کی بروقت تکمیل یقینی بنائیں۔

پانی اور بجلی کے وزیر خواجہ آصف نے اجلاس کو یقین دلایا کہ ان کی وزارت بجلی کے تمام منصوبوں کی جلد تکمیل کے لئے پنجاب حکومت سے ہر ممکن تعاون کرے گی۔
ایک اور اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے شہباز شریف نے کہا ہے کہ عوامی فلاح وبہبود کی سکیمیں ترجیحی بنیادوں پر مکمل کی جائیں گی تاکہ اقتصادی سرگرمیوں میں اضافہ کرکے عوام کی سماجی و اقتصادی حالت بہتر بنائی جاسکے۔

انہوں نے کہا کہ سکلڈ ڈیویلپمنٹ پروگرام کے تحت بیس لاکھ نوجوانوں کو تربیت دی جائے گی جن میں سے پچاس فیصد نشستیں خواتین کیلئے مختص کی جائیں گی۔

شہباز شریف نے کہا کہ اگلے چار سال کے لئے شرح نمو کاہدف آٹھ فیصد ہدف مقرر کیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ نظر انداز کیے گئے اور پسماندہ علاقوں کی ترقی کے لئے تمام دستیاب وسائل بروئے کار لائے جائیں گے۔