وفاقی وزیر نے کہا کہ بھارت کے ساتھ تمام حل طلب مسائل کو پرامن مذاکرات کے ذریعے حل کرنا پاکستان کی پالیسی ہے ۔

نواز،مودی ملاقات سے کشیدگی کم کرنے میں مدد ملے گی:برجیس طاہر
12 جولائی 2015 (20:19)
0

اُمور کشمیر اور گلگت بلتستان کے وزیر محمد برجیس طاہر نے کہاہے کہ وزیراعظم نوازشریف کی روس میں بھارت کے وزیراعظم سے ملاقات سے دونوں ملکوں کے درمیان کشیدگی کم کرنے میں مدد ملے گی ۔
اُنہوں نے اتوار کے روز سانگلہ ہل میں ایک تقریب سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بھارت کے ساتھ تمام حل طلب مسائل کو پرامن مذاکرات کے ذریعے حل کرنا پاکستان کی پالیسی ہے ۔
اُنہوں نے کہا کہ اسی وجہ سے وزیراعظم نوازشریف نے بھارتی وزیراعظم کی تقریب حلف برداری میں شرکت کی تھی تاہم افسوس کی بات ہے کہ نریندر مودی نے مثبت رد عمل کا مظاہرہ نہیں کیا اور کنٹرول لائن اور ورکنگ بائونڈری پر کشیدگی میں اضافے کو جاری رکھا۔
محمد برجیس طاہر نے دونوں وزرائے اعظم کے درمیان ملاقات میں مذاکرات کی بحالی کے فیصلے پر اطمینان کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ اس عمل کا مثبت نتیجہ بھارت کی سنجیدگی اور خلود پر منحصر ہے ۔
اُنہوں نے کہا کہ کشمیر دونوں ملکوں کے درمیان بنیادی مسئلہ ہے اور اگر کسی کا خیال ہے کہ مسئلہ کشمیر کے حل کے بغیر دونوں ملکون کے تعلقات معمول پر آسکتے ہیں تو وہ غلطی پر ہے ۔ اُنہوں نے کہا کہ پاکستان ایجنڈے میں مسئلہ کشمیر کو سرفہرست رکھے گااور بھارت کو بھی دانش مندی کا مظاہرہ کرنا چاہیئے تاکہ خطے میں دیر پا امن قائم کیاجاسکے ۔