عاصم سلیم باجوہ نےکہاہےکہ اس نیٹ ورک کے 97 دہشت گردوں کو اب تک گرفتاراورخفیہ معلومات پرمبنی 13212کارروائیوں کے ذریعے ان کے ٹھکانوں کوختم کردیا گیا ہے۔

کراچی میں دہشتگردوں کےنیٹ ورک کوتوڑدیاگیاہے:ڈی جی آئی ایس پی آر
12 فروری 2016 (14:49)
0

کراچی میں دہشت گردوں کے نیٹ ورک کو توڑ دیا گیا ہے۔آج کراچی میں بریفنگ دیتے ہوئے فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل ، لیفٹیننٹ جنرل عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ یہ نیٹ ورک کالعدم تحریک طالبان،لشکرجھنگوی اورالقاعدہ نےبنایا تھا۔انہوں نےکہاکہ یہ نیٹ ورک کراچی سےکارروائیاں کرتا تھا جبکہ دہشت گردحملوں کی منصوبہ بندی میران شاہ میں کی جاتی تھی۔

عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ اس نیٹ ورک سےتعلق رکھنے والےستانوے دہشتگردوں کو اب تک گرفتار کیا جا چکا ہے اور ان کے ٹھکانوں کو خفیہ معلومات پر مبنی تیرہ ہزار دو سو بارہ کارروائیوں کے ذریعے ختم کر دیا گیا ہے۔انہوں نے کہا کہ یہ دہشت گرد کراچی ، پشاور اور کامرہ میں فوجی تنصیبات پر دہشتگرد حملوں میں ملوث تھےفوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا کہ یہ تینوں دہشت گرد گروپ کراچی میں جرائم پیشہ اور دہشتگردانہ کارروائیوں میں ملوث تھے اور ان کے کراچی اور حیدرآباد کی جیلوں کو توڑنے کے منصوبے ناکام بنا دئیے گئے۔

انہوں نے کہا کہ ملک سے دہشت گردی کے خاتمے تک آپریشن ضرب عضب اور کراچی آپریشن جاری رہے گا۔عاصم سلیم باجوہ نے کہا کہ رینجرز نے کراچی میں سات ہزار کارروائیاں کیں اور چھ ہزار مشتبہ دہشت گردوں کو گرفتار کر کے پولیس کے حوالے کیا۔انہوں نے کہا کہ ٹارگٹ کلنگ اور بھتہ خوری کے واقعات میں کمی آئی ہے۔آئی ایس پی آر کے ڈائریکٹر جنرل نے کہا کہ کراچی میں ہر قیمت پر امن کو بحال کیا جائے گا اس موقع پر کئی دہشت گردوں کو میڈیا کے سامنے پیش کیا گیا۔