یہ بات نیٹو کے ایک فوجی افسر نے برسلز میں کہی