بل کو حزب اختلاف کے ارکان نے بغیر کسی اعتراض کے منظور کیا۔

 پارلیمنٹ سے پی آئی اے کو پبلک لمیٹڈ کمپنی بنانے کا بل منظور
11 اپریل 2016 (19:49)
0

پی آئی اے کے بارے میں بل کو حزب اختلاف کے ارکان نے بغیر کسی اعتراض کے منظور کیا۔
پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس کے دوران پی آئی اے کارپوریشن کنورژن بل مجریہ2016 کی منظوری دی گئی ہے جس کا مقصد قومی ائیر لائن کو پبلک لمیٹڈ کمپنی بنانا ہے۔
یہ بل وفاقی وزیر زاہد حامد نے پیش کیا تھا۔
پی آئی اے کے بارے میں بل کو حزب اختلاف کے ارکان نے بغیر کسی اعتراض کے منظور کیا، حزب اختلاف کے ساتھ اختلافات دور کرنے کیلئے دس رکنی خصوصی کمیٹی تشکیل دی گئی تھی جس کے اجلاس کے دوران اس بارے میں حکومت کے ساتھ مفاہمت ہوئی تھی۔
حکومت نے حزب اختلاف کے بنیادی مطالبات پورے کئے تاہم بل کی منظوری کے دوران اے این پی نے واک آئوٹ کیا۔
پارلیمنٹ نے امیگریشن ترمیمی بل مجریہ2016 ،سرکاری ملازمین کے ترمیمی بل مجریہ2016 اور نجکاری کمیشن کے ترمیمی بل 2016 کی منظوری بھی دی۔
پی آئی اے کے بل کے سوا دوسرے بل غیر حکومتی ارکان نے پیش کیے تھے۔
امیگریشنترمیمی بل سینیٹر غوث محمد خان نیازی، سرکاری ملازمین کا ترمیمی بل سینیٹر سعید غنی اور نجکاری کمیشن کا ترمیمی بل سینیٹر فرحت اللہ بابر نے پیش کیا۔
ایجنڈے میں شامل دیگر دو بل موخر کر دیئے گئے۔