Tuesday, 23 October 2018, 06:11:21 am
این سی اے سی کا پی بی سی ہیڈکوارٹرز میں اینکرز،نیوز ریڈرز کیلئے تربیتی ورکشاپ کا اہتمام
October 11, 2018

 ریڈیوپاکستان کی قومی نشریاتی ادارے کی حیثیت سے یہ اولین ذمہ داری ہے کہ وہ حقائق پرسمجھوتہ کئے بغیر عالمی سطح پر قومی مفادات کو فروغ دے اور متوازن کوریج یقینی بنائے۔یہ بات ریڈیوپاکستان کے خبروں اور حالات حاضرہ کے چینل کی جانب سے آج اسلام آباد میں پاکستان براڈ کاسٹنگ کارپوریشن کے ہیڈ کوارٹرز میں اینکرز اور نیوز ریڈرز کیلئے ایک روزہ تربیتی ورکشاپ میں اجاگرکی گئی۔ورکشاپ میں چینل کے اینکرز اور تجزیہ کاروں کی بڑی تعداد نے شرکت کی جس کا موضوع تھا  ڈیجیٹل میڈیا کے دور میں قومی نشریاتی ادارے کا کرداراورچیلنجزورکشاپ کا افتتاح ڈائریکٹر نیوز اینڈ کرنٹ افیئرز جاوید خان جدون نے کیا ۔بی بی سی کے مشہور براڈ کاسٹر آصف فاروقی نے شرکاء کے ساتھ ملکی اور بین الاقوامی سطح پر تیزی سے رونما ہونیوالی تبدیلیوں کے تناظر میں پاکستان اور عالمی ذرائع ابلاغ کے اداروں کی جانب سے جاری ادارتی پالیسیوں سمیت مختلف امور پر تبادلہ خیال کیا ۔شرکاء نے مختلف اقدامات پرغورکیا جس کے ذریعے ریڈیوپاکستان کے حالات حاضرہ کے چینل کو جدید نشریاتی چینل میں بدلا جاسکتا ہے۔ ڈائریکٹر نیوز اینڈ کرنٹ افیئرز نے چینل کے عملے اور اینکرز اور تجزیہ کاروں سے کہاکہ وہ درستی ، اعتماد اور مقصدیت کے اصولوں پرسمجھوتہ نہ کریں  انہوں نےکہاکہ قوم کی آواز ہونے کے ناطے ریڈیوپاکستان کی نجی چینلوں سے کسی قسم کی مسابقت نہیں ہے ۔انہوں نے کہاکہ ریڈیوپاکستان عالمی برادری کے سامنے ملک کا مثبت تشخص اجاگرکرنے میں براڈ کاسٹنگ کی مثالی اقدار کی پاس داری کررہا ہے ۔بی بی سی کے براڈ کاسٹر آصف فاروقی نے زوردیا کہ خبروں اور حالات حاضرہ کے پروگراموں کی نشریات میں غیرجانبدارایت سرکاری نشریاتی اداروں کا طرہ امتیاز ہوناچاہیے۔انہوں نے کہاکہ سرکاری نشریاتی اداروں کی ذمہ داری ہے کہ وہ متوازن رائے دیں اور اپنی طرف سے تبصرے کرنے کی بجائے دونوں اطراف سے واقعات بیان کریں ۔ورکشاپ کے اختتام پر شرکاء میں سرٹیفکیٹس تقسیم کئے گئے ۔