Friday, 22 November 2019, 12:03:13 am
صدرکی آڈٹ کے عمل میں شفافیت یقینی بنانے کیلئے جدید ٹیکنالوجی کے استعمال پر زور
September 11, 2019

صدرڈاکٹر عارف علوی نے آڈٹ کے عمل میں شفافیت یقینی بنانے کے لئے جدید ٹیکنالوجی کے استعمال پر زور دیا ہے۔

انہوں نے یہ بات بدھ کے روز اسلام آباد میں آڈیٹر جنرل آف پاکستان جاوید جہانگیر سے گفتگو کرتے ہوئے کہی۔

آڈیٹر جنرل آف پاکستان کے دفتر کی آئینی اہمیت کو اجاگر کرتے ہوئے صدر نے کہا کہ اچھا نظم و نسق یقینی بنانے کے لئے شفافیت کسی بھی حکومت کی ترجیح ہونی چاہئے۔

صدر کو آڈیٹر جنرل آف پاکستان کی جانب سے مالی سال 18-2017ء کے لئے سالانہ آڈٹ رپورٹ پیش کی گئی۔

مالی سال 18-2017ء کے دوران ایک سو تیس کھرب سے زائد روپے کا آڈٹ کیا گیا اور ایک سو ستائیس ارب روپے سے زائد بازیاب کرائے گئے۔

آڈیٹر جنرل آف پاکستان نے صدر کو سالانہ رپورٹ کے خاص پہلوؤں کے بارے میں بتایا اور کہا کہ ہرکوشش ادارے کی کارکردگی اور نظم و ضبط یقینی بنانے کے لئے کی گئی جس کا مقصد پاکستان کو بدعنوانی سے پاک بنانا ہے۔ انہوں نے صدر کو یہ بھی بتایا کہ آڈٹ کے عمل کو خود کارنظام میں ڈالنے کی کوشش بھی جاری ہے۔