اسلامی تعاون تنظیم کی روہنگیا مسلمانوں پر جبر وتشدد پر میانمار حکومت کی مذمت ۔

او آئی سی کا میانمار کی سکیورٹی فورسز کی جانب سے روہنگیا مسلمانوں کیخلاف منظم ظالمانہ کارروائیوں پر اظہار تشویش
10 ستمبر 2017 (17:29)
0

اسلامی تعاون تنظیم نے میانمار کی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اقوام متحدہ کی انسانی حقوق کی کونسل کے حقائق مشن کو انسانی حقوق کی مبینہ خلاف ورزیوں کی تحقیقات کرنے کی اجازت دے تاکہ ذمہ دار عناصر کو کٹہرے میں لایا جاسکے۔
اسلامی تعاون تنظیم نے یہ موقف آج آستانہ میں سائنس اور ٹیکنالوجی کے بارے میں سربراہ اجلاس کے موقع پر پیش کیا۔
اسلامی تعاون تنظیم نے روہنگیا مسلمانوں پر جبر وتشدد پر میانمار کی حکومت کی مذمت بھی کی۔
اجلاس میں سیکورٹی فورسز کی طرف سے ایک سازش کے تحت ظالمانہ کارروائیوں کے نتیجے میں تقریباً تین لاکھ مسلمانوں کے گھروں اور عبادتگاہوں کو جلانے اور ان کی بنگلہ دیش نقل مکانی پر گہری تشویش کا اظہار بھی کیا گیا۔
اسلامی تعاون تنظیم نے میانمار کی حکومت سے کہا کہ وہ 1982 کے شہریت ایکٹ پر عملدرآمد کرے اور ان وجوہات کا سدباب کرے جن کی وجہ سے لاقانونیت پیدا ہوئی اور روہنگیا مسلمان حقوق سے محروم ہوئے ہیں۔
اسلامی تعاون تنظیم نے میانمار کی حکومت پر زور دیا ہے کہ وہ ملک میں اور بیرون ملک روہنگیا مسلمانوں کی پرامن گھروں کو واپسی کیلئے فوری اقدامات کرے۔