منصوبہ بندی اورترقی کےوزیرنےکہاہے کہ تحریک انصاف کے سربراہ کا دھاندلی کی تحقیقات کے عدالتی کمیشن میں آئی ایس آئی اور ایم آئی حکام کو شامل کرنے کا مطالبہ غیر منطقی اور غیر آئینی ہے۔

عدالتی کمیشن صرف سپریم کورٹ کےججوں پر مشتمل ہونا چاہئے:احسن اقبال
10 نومبر 2014 (11:24)
0

منصوبہ بندی اور ترقی کے وزیر احسن اقبال نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کے سربراہ کی طرف سے انتخابی دھاندلی کے الزامات کی تحقیقات کے عدالتی کمیشن میں آئی ایس آئی اور ایم آئی حکام کو شامل کرنے کا مطالبہ غیر منطقی اور غیر آئینی ہے۔

ایک ٹیلی ویژن چینل پر اظہار خیال کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ عدالتی کمیشن کے قیام کا عمران خان کا مطالبہ حکومت پہلے ہی تسلیم کرچکی ہے لیکن آئی ایس آئی اور ایم آئی حکام کی اس میں شمولیت کا مطالبہ سمجھ سے بالا تر ہے۔


وفاقی وزیر نے کہا کہ عدالتی کمیشن صرف سپریم کورٹ کے ججوں پر ہی مشتمل ہونا چاہئے۔احسن اقبال نے عمران خان سے کہا کہ وہ حکومت کے ساتھ معاملات کو سلجھانے کے لئے مذاکرات کی میز پر آئیں اور انتخابی اصلاحاتی کمیٹی کی کارروائی میں بھی حصہ لیں۔