آستانہ میں قیام کے دوران وزیراعظم نے شنگھائی تعاون تنظیم کی ریاستی کونسل کے سربراہوں کے سترھویں اجلاس میں شرکت کی۔

وزیراعظم قازخستان کا سرکاری دورہ مکمل کرنے کے بعد وطن واپس پہنچ گئے
10 جون 2017 (15:34)
0

وزیراعظم نواز شریف قازخستان کا دو روزہ سرکاری دورہ مکمل کرنے کے بعد وطن واپس پہنچ گئے ہیں آستانہ میں قیام کے دوران وزیراعظم نے شنگھائی تعاون تنظیم کی ریاستی کونسل کے سربراہوں کے سترھویں اجلاس میں شرکت کی۔

شنگھائی تعاون تنظیم کے سربراہ اجلاس کے موقع پر انہوں نے روس ، قازخستان ، ازبکستان اور افغانستان کے صدور اور اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل سے دوطرفہ ملاقاتیں بھی کیں۔روس کے صدر ولادی میر پیوٹن سے ملاقات میں دونوں رہنماوں نے دوطرفہ تعلقات کو مزید فروغ دینے کی خواہش کا اعادہ کیا۔
انہوںنے دوطرفہ تعلقات کا جامع جائزہ لیا اور اس بات پر اتفاق کیا کہ دونوں ملکوں کے تعلقات درست سمت میں گامزن ہیں۔
انہوں نے کہا کہ دونوں ملکوں کے درمیان اعلیٰ سطح کے روابط اور خوشگوار سیاسی تعلقات نے سیاسی خیرسگالی کو پائیدار اقتصادی شراکت داری میں بدلنے کی راہ ہموار کر دی ہے۔انہوں نے تجارت ، معیشت ، سائنس اور فنی تعاون کے بارے میں پاکستان روس بین الحکومتی کمیشن کا اگلا اجلاس رواں سال ستمبر میں ماسکو میں منعقد کرنے پر اتفاق کیا ہے۔شمال جنوب گیس پائپ لائن منصوبے پر عملدرآمد تیز کرنے پر بھی اتفاق کیا گیا ۔ دونوں فریقوں نے اس حوالے سے معاہدے پر دسمبر 2015 میں دستخط کئے تھے۔فریقین نے حالیہ برسوں کے دوران دفاعی تعلقات کا بھی جائزہ لیا۔

وطن روانگی سے پہلے وزیر اعظم نے آستانہ میں خصوصی عالمی نمائش ایکسپو2017 میں لگایا گیا پاکستان کا اسٹال دیکھا۔انہوں نے اسٹال پر نمائش کی گئی اشیاء میں گہری دلچسپی ظاہر کی اور انہیں روایتی فن سے متعلق اشیاء ، ہوا اور شمسی توانائی سے متعلق ٹیکنالوجی کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔وزیرتجارت خرم دستگیر ، پٹرولیم کے وزیر مملکت جام کمال اور مشیر خارجہ سرتاج عزیز بھی وزیراعظم کے ہمراہ تھے۔
ایکسپو 2017 دس ستمبر تک جاری رہے گی جس کا مقصد توانائی کے متبادل ذرائع کا فروغ ، ماحول دوست ٹیکنالوجی اور ماحولیاتی نظام کا تحفظ ہے۔
ایک سو سے زائد ملک اور بائیس عالمی تنظیمیں نمائش میں شریک ہیں۔