وزیراعظم نے یقین ظاہر کیا کہ پیکیج سے برآمدات میں اضافے کے اہداف کے حصول میں مدد ملے گی۔

برآمدات کے فروغ کیلئے180رب روپے کے مراعاتی پیکیج کا اعلان
10 جنوری 2017 (18:44)
0

وزیراعظم نوازشریف نے برآمدات کے فروغ کیلئے ایک سو اسی ارب روپے کی مراعات کے پرکشش پیکج کا اعلان کیا ہے۔

انہوں نے یہ اعلا ن منگل کے روز اسلام آباد میں ایک تقریب میں کیا جس میں کاروباری برادری کے ارکان نے شرکت کی۔
پیکج کے تحت کپاس کی درآمد پر کسٹم ڈیوٹی اور سیلز ٹیکس ختم کردیا گیا ہے۔
اسی طرح پولیسٹر کے علاوہ دستی فائبر پر کسٹم ڈیوٹی اور ٹیکسٹائل مشینری کی درآمد پر عائد سیلز ٹیکس بھی ختم کردیا گیا ہے۔
پیکج کے تحت ٹیکسٹائل ملبوسات پر ڈیوٹی ڈرا بیک کی شرح سات فیصد ہوگی جبکہ ٹیکسٹائل مصنوعات پر چھ فیصد، تیار فیبرک پر پانچ فیصد، دھاگے اور گرے فیبرک پر چار فیصد، کھیلوں کے سامان ، چمڑے کی مصنوعات اور جوتوں پر سات فیصد ہوگی۔
وزیراعظم نے یقین ظاہر کیا کہ پیکج سے برآمدات میں اضافے کے اہداف کے حصول میں مدد ملے گی۔
انہوں نے کہا کہ جب موجودہ حکومت اقتدار میں آئی تو اسے کئی چیلنجز کا سامنا تھا ۔ انہوں نے کہا کہ ان کی حکومت نے ان چیلنجز سے نمٹنے کیلئے جرات مندانہ اقدامات کئے اور آج ہر طرف ترقی نظر آ رہی ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ چین پاک راہداری منصوبے کیلئے درجنوں بجلی گھر قائم کئے جارہے ہیں جبکہ حکومت کئی بجلی گھروں کیلئے فنڈ فراہم کررہی ہے۔
وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے اپنے خطاب میں کہا کہ حکومت کاروباری افراد کو متعدد مراعات دے رہی ہے اور اب یہ ان کی ذمہ داری ہے کہ وہ برآمدات میں نمایاں اضافہ کریں۔
وزیر تجارت خرم دستگیر نے اس اعتماد کا اظہار کیا کہ اس پیکج اور امن وامان اور توانائی کی بہتر صورتحال کی بدولت برآمد کنندگان اچھے نتائج دیں گے۔
پاکستان کے ایوان ہائے صنعت وتجارت کی فیڈریشن کے صدر زبیر طفیل نے کہا موجودہ حکومت کی طرف سے گزشتہ تین برسوں کے دوران کئے گئے اقدامات کے نتیجے میں ملک میں استحکام آیا ہے۔