نوازشریف نے کہا کہ پاکستان تنظیم کے مشترکہ مقاصد کے حصول کی غرض سے مزید کوششیں کرے گا۔

پاکستان پرامن ہمسائیگی کی پالیسی پر عمل پیرا ہے ،وزیر اعظم
09 جون 2017 (18:38)
0

شنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ملکوں کی کونسل کے سربراہان سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم محمد نواز شریف نے کہا کہ پاکستان شنگھائی تعاون تنظیم کا مکمل رکن ہونے کی حیثیت سے علاقائی تعاون ، رابطے اور اقتصادی خوشحالی کے لئے تنظیم کے مشترکہ مقاصد کے حصول کی غرض سے مزید کوششیں کرے گا۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان پرامن ہمسائیگی کی پالیسی پر عمل پیرا ہے جس کے تحت مستقبل کی نسلوں کیلئے امن اور ہم آہنگی کے فروغ پر زور دیا جا رہا ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ یہ تنظیم رکن ملکوں کو مشترکہ خوشحالی اور رابطے کے فروغ سمیت دہشتگردی ، انتہا پسندی ، غربت ، بیروزگاری پر قابو پانے اور ماحولیاتی تبدیلی اور پانی کے تحفظ کے مسائل سے نمٹنے کیلئے ایک پلیٹ فارم فراہم کرتی ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان نے دہشت گردی اور انتہا پسندی کی برائیوں سے کامیابی سے جنگ کی ہے اور اس کی حکومت نے ملک کی اقتصادی صورتحال کو مکمل طور پر خوشحالی کی راہ پر گامزن کر دیا ہے۔
نواز شریف نے کہا کہ پاکستان ، چین پاکستان اقتصادی راہداری منصوبے پر ایک خطہ ایک سڑک قومی منصوبے کے طور پر جانفشانی سے عملدرآمد کر رہا ہے جو اقتصادی تعاون تنظیم کے تمام رکن ملکوں کے لئے فائدہ مند ہو گا۔
شنگھائی تعاون تنظیم کا مکمل رکن بننے پر بھارت کو مبارکباد دیتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ یہ پاکستان اور شنگھائی تعاون تنظیم کے رکن ملکوں کے لئے ایک تاریخی دن ہے۔
انہوں نے پاکستان کو تنظیم کا مکمل رکن بنانے کیلئے بھرپور حمایت کرنے پر چین ، روس اور دیگر بانی ارکان کا شکریہ ادا کیا۔