وفاقی وزیر موسمیاتی تبدیلی نے کہا ہے کہ وفاقی حکومت گرین پاکستان پروگرام شروع کرنے کیلئے چاروں صوبوں کو مکمل مدد فراہم کررہی ہے ۔

مختلف شہروں میں گاڑیوں سے پیدافضائی آلودگی کو جانچنے کیلئے ریبڈماس ٹرانزٹ سسٹم کاآغاز
09 جون 2017 (15:48)
0

موسمیاتی تبدیلی کے وفاقی وزیر زاہد حامد نے سینٹ کو بتایاکہ موسمیاتی تبدیلی کے مسئلے سے نمٹنے کیلئے پچھلے ایک سال کے دوران متعدد اقدامات کیے گئے ہیں۔
آج سینٹ میں شیری رحمن کی طرف سے پیش کردہ توجہ دلائو نوٹس کے جواب میں انہوں نے کہاکہ پاکستان ان ممالک میں شامل ہے جو موسمیاتی تبدیلی سے زیادہ متاثر ہیں انہوں نے کہاکہ حکومت ان چیلنجوں سے بخوبی آگاہ ہے ۔
انہوں نے کہاکہ پاکستان نے پیرس معاہدے پر دستخط کیئے ہیں جس کے تحت وہ زیرہلی گیسوں کا 20 فیصد اخراج کم کرنے کیلئے پر عزم ہے۔انہوں نے کہاکہ ہم نے موسمیاتی تبدیلی سے متعلق ایک کونسل قائم کی ہے جس کے چیئرمین وزیراعظم خود ہیں ، اسی طرح موسمیاتی تبدیلی کے بارے میں ایک ادارہ قائم کیاجائے گا۔
انہوں نے کہاکہ وفاقی حکومت گرین پاکستان پروگرام شروع کرنے کیلئے چاروں صوبوں کو مکمل مدد فراہم کررہی ہے ۔وفاقی وزیر نے کہاکہ گاڑیوں سے خارج ہونے والے دھوئیں کو چیک کرنے کے کوششوں کے طورپر مختلف شہروں میں رپیڈ ماس ٹرانزٹ سسٹم کا آغاز کیاگیاہے۔

سینٹ نے آج غیرقانونی انتقال کے ترمیمی بل 2017ء کی منظوری دی ہے۔یہ بل داخلہ امور کے وزیرمملکت بلیغ الرحمن نے پیش کیاتھا ۔ایوان میں آج مزید دو بل بھی پیش کیے گئے ۔ان بلوں میں پوسٹ آفس ترمیمی بل 2017ء اور قرآن پاک کی لازمی تعلیم کا بل 2017ء شامل ہے ۔
یہ بل قانون انصاف کے وزیر زاہد حامد نے پیش کیے ۔چیئرمین نے بل متعلقہ قائمہ کمیٹیوں کو بھیجوائے دئیے ۔