چین نے قومی سا لمیت اور وقار کے تحفظ کیلئے پاکستان کی حمایت جاری رکھنے کا یقین دلایا ہے
08 ستمبر 2017 (10:10)
0

پاکستان اور چین نے دفاع اور علاقائی سلامتی کیلئے مل کر کام کرنے پر اتفاق کیا ہے۔
یہ اتفاق رائے جمعہ کے روز بیجنگ میں وزیر خارجہ خواجہ محمد آصف اور ان کے چینی ہم منصب وانگ یی کے درمیان تفصیلی مذاکرات کے دوران طے پایا ۔
بعد میں اپنے چینی ہم منصب کے ہمراہ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستانی وزیر خارجہ نے کہاکہ دونوں ملکوں نے اس بات پر اتفاق کیا ہے کہ افغان مسئلے کو سیاسی طورپر حل کرنا ہوگا اور اس تنازع کا کوئی فوجی حل نہیں ہے۔
افغانستان اور جنوبی ایشیا کے بارے میں امریکی پالیسی کے حوالے سے خواجہ آصف نے کہاکہ خطے میں امن اورسلامتی کیلئے افغانستان میں امن اورسلامتی ناگزیر ہے انہوں نے کہاکہ ہمارا موقف واضح ہے کہ افغان تنازع سیاسی مذاکرات کے ذریعے ہی حل ہونا چاہیے۔
انہوں نے کہاکہ چین اس سلسلے میں تعمیری کردار ادا کررہا ہے اورپاکستان اور چین مل کر افغان مسئلے کے سیاسی حل میں اپنا کردار ادا کرسکتے ہیں۔
وفاقی وزیر نے کہاکہ پاکستان اور چین کے درمیان دہشت گردی کے معاملے پر قریبی تعاون ہے اورپاکستان دہشت گردی ، انتہاپسندی اورعلیحدگی پسندی کے معاملے پر چین کے مضبوط موقف کی حمایت کرتا ہے۔
انہوں نے کہاکہ ضرب عضب اور ردالفساد کے تحت EAST TURKESTAN ISLAMIC MOVEMENT سمیت تمام دہشت گرد گروپوں کے خلاف جامع اوربھرپور کارروائیاں کی ہیں جن کے مثبت نتائج برآمد ہوئے ہیں ۔
خواجہ آصف نے کہاکہ انہوں نے اپنے چینی ہم منصب کے ساتھ تجارت ، معاشی تعاون، چین پاکستان اقتصادی راہداری ، دفاع ، سلامتی کے تعلقات، ثقافت، تعلیم اورعوام کی سطح پر رابطوں سمیت دو طرفہ امور پر تفصیلی تبادلہ خیال کیا ۔

چین کے وزیرخارجہ وانگ یی نے کہاکہ پاکستان اور چین بدلتے ہوئے علاقائی اور عالمی منظرنامے میں ایک دوسرے کے ساتھ کھڑے ہیں ۔
انہوں نے کہاکہ افغانستان میں امن پاکستان، چین اور پورے خطے کے بہترین مفاد میں ہے ۔انہوں نے کہاکہ چین، دفاع اورعلاقائی استحکام میں پاکستان سے تعاون کرے گا۔
چینی وزیرخارجہ نے کہاکہ پاکستان ، چین اور افغانستان کے درمیان پہلا سہ فریقی اجلاس اس سال چین میں ہوگا جس میں تذویراتی روابط ، سلامتی سے متعلق مذاکرات اور عملی تعاون پر تبادلہ خیال کیاجائے گا۔
ایک سوال پر وانگ یی نے کہاکہ پاکستان دہشت گردی کا شکاررہا ہے اور یہ بات انتہائی اہم ہے کہ پاکستان دہشت گردی کے خلاف عالمی سطح پر تعاون میں اہم شراکت دار ہے ۔
انہوں نے کہاکہ عالمی برادری کو دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی انتہائی کوششوں اور گرانقدر قربانیوں کا اعتراف کرنا چاہیے اور اسے سراہا جاناچاہیے ۔ انہوں نے کہاکہ کچھ ممالک کو پاکستان کواس کا کریڈٹ دیناچاہیے جو اس کا مستحق ہے
ایک سوال کے جواب میں خواجہ آصف نے کہاکہ پاکستان اپنے خطے میں امن کیلئے افغانستان کے ساتھ اقدامات کی پالیسی پر عمل پیرا رہے گا۔