File Photo

امریکہ کامیانمار پر رکھائین میں انسانی رسائی کی اجازت دینے پر زور
08 ستمبر 2017 (08:00)
0

امریکہ نے بھی میانمار میں بحران پر سخت تشویش کااظہار کیا ہے اور وہاں کی حکومت پر زوردیا ہے کہ صوبہ رکھائن تک انسانی رسائی کی اجازت دی جائے۔محکمہ خارجہ کی ترجمانHeather Nauert نے کہاکہ سکیورٹی فورسز پر روہنگیا دیہات کو نذر آتش کرنے اورتشدد کے واقعات سمیت انسانی حقوق کی خلاف ورزی کے سنگین الزامات عائد کئے گئے ہیں۔

اقوام متحدہ کے مطابق ڈھائی لاکھ سے زیادہ روہنگیا مسلمان گزشتہ اکتوبر میں تشدد شروع ہونے کے بعد بنگلہ دیش کی طرف نقل مکانی کر چکے ہیں۔

دریں اثناء عالمی پارلیمانی فورم نے میانمار کے صوبہ رکھائن میں جاری پر تشدد واقعات پر گہری تشویش ظاہر کی ہے۔
اس تشویش کااظہار انڈو نیشیا کے جزیرہ بالی میں پائیدار ترقی کے بارے میں عالمی پارلیمانی فورم کے اختتام پر جاری ہونے والے مشترکہ اعلامیے میں کیاگیا۔
فورم نے تمام پائیدار ترقیاتی اہداف کا بروقت حصول یقینی بنانے کیلئے آزادی امن سلامتی اور تمام انسانوں کااحترام کرنے کی اہمیت پر زور دیا۔
فورم نے جمہوریت کے استحکام خصوصاً رنگ نسل اور مذہب سے بالاتر ہوکر انسانی حقوق کا تحفظ یقینی بنانے میں ارکان پارلیمنٹ کا کردار بڑھانے پر بھی زوردیا۔
ادھر بھارت نے میانمار میں روہنگیا مسلمانوں پر تشدد کے بارے میں عالمی اقتصادی فورم میں منظور کی گئی قرار داد کا حصہ بننے سے انکار کردیا ہے۔