پاکستانی مندوب نے ویٹو کے اہم مسئلے کو حل کرنے پر بھی زور دیا جو سلامتی کونسل کے موثر ہونے، شفافیت اور جواب دہی میں بڑی رکاوٹ ہے۔

File Photo

سلامتی کونسل میں غیر مستقل ارکان کی تعداد میں اضافہ ہی بہترین اقدام ہے:ملیحہ لودھی
08 مارچ 2017 (12:11)
0

پاکستان نے اپنے اس موقف کا اعادہ کیا ہے کہ اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل میں نئی مستقل نشستوں کی بجائے غیر مستقل ارکان کی تعداد میں اضافہ ہی بہترین اقدام ہے۔

سلامتی کونسل میں اصلاحات کے بارے میں بین الحکومتی مباحثے کے دوران مندوبین سے گفتگو کرتے ہوئے اقوام متحدہ میں پاکستان کی مستقل مندوب ملیحہ لودھی نے کہا کہ غیر مستقل ارکان کی تعداد میں اضافے سے سلامتی کونسل مزید جمہوری ادارہ بن جائے گی۔
انہوں نے کہا کہ مقررہ مدت کے انتخابات اور مناسب جغرافیائی تقسیم پرمبنی منتخب نشستوں کی صورت میں علاقائی نمائندگی بڑھائی جاسکتی ہے۔
علاقائی نمائندگی کے تصور کے تحت مستقل ارکان کی تعداد بڑھانے کے مطالبہ سے متعلق انہوں نے کہا کہ اگر مستقل ارکان خطے کو جواب دہ نہ ہوں تو وہ نمائندگی کا دعویٰ نہیں کرسکتے۔
پاکستانی مندوب نے ویٹو کے اہم مسئلے کو حل کرنے پر بھی زور دیا جو سلامتی کونسل کے موثر ہونے، شفافیت اور جواب دہی میں بڑی رکاوٹ ہے۔
انہوں نے کہا کہ کونسل میں منتخب ارکان کی آواز مضبوط کرکے ویٹو کو متوازن بنایا جاسکتا ہے۔