ناروے کی وزیراعظم کےہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب میں نوازشریف نے توانائی خصوصاً پن بجلی کے شعبے میں ناروے کے تعاون کی خواہش کا اظہار کیا۔

تعلیم کا فروغ حکومت کی اولین ترجیح ہے:وزیراعظم
08 جولائی 2015 (10:49)
0

وزیراعظم محمد نوازشریف نے توانائی خصوصاًپن بجلی کے شعبے میں ناروے کےتعاون کی خواہش ظاہر کی ہے تاکہ ملک میں توانائی کی بڑھتی ہوئی ضروریات سے نمٹا جاسکے۔اوسلو میں ناروے کی وزیراعظم کے ہمراہ ایک مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ میں نے ناروے کی حکومت سے پن بجلی کے شعبے میں ممکنہ تعاون سے متعلق امورپر بات چیت کی ہے۔

وزیراعظم نےجوترقی کیلئےتعلیم کی اہمیت کے بارے میں اوسلو سربراہ اجلاس میں پاکستان کی نمائندگی کیلئے ناروے کے تین روزہ دورے پر ہیں، کہا کہ ہم ملک میں پن بجلی کے مختلف نئے منصوبے شروع کررہے ہیں۔پاکستان میں تعلیم کی صورتحال سے متعلق ایک سوال پر وزیراعظم نے کہا کہ تمام تر مشکلات کے باوجود تعلیم کا فروغ پاکستان کی اولین ترجیح ہے۔

انہوں نے کہا کہ دہشتگردی سمیت ملک کو درپیش دیگر مسائل کے باوجود پاکستان نے شرح خواندگی میں اضافے اور معیار تعلیم میں بہتری کیلئے خاطر خواہ انتظامات کئے ہیں۔افغان حکام اور طالبان کے درمیان مذاکرات کے بارے میں انہوں نے امید ظاہر کی کہ مذاکرات کے مثبت نتائج برآمد ہوں گے جو افغانستان میں امن وسلامتی کیلئے بڑے مفید ثابت ہوں گے۔انہوں نے افغان حکام اور طالبان کے درمیان مذاکرات کو بڑی کامیابی قرار دیا۔

وزیراعظم نے کہا کہ بین الاقوامی برادری کی بھی ذمہ داری ہے کہ وہ مذاکرات کے عمل کو نقصان نہ پہنچنے دے۔اس موقع پر ناروے کی وزیراعظم مسز ارنا سولبرگ نے کہا کہ فریقین نے دوطرفہ دلچسپی کے امور کے علاوہ مختلف علاقائی اور بین الاقوامی معاملات پر تبادلہ خیال کیا۔انہوں نے کہا کہ دونوں ملک مختلف شعبوں میں تعلقات اور تعاون میںفروغ کے خواہاں ہیں۔