نوازشریف نے دوٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ حکومت نے ابھی تک یمن کے معاملے پر کوئی فیصلہ نہیں کیاہے۔

حکومت پارلیمنٹ کےفیصلےکےمطابق یمن کےمسئلےپراپنی پالیسی کوحتمی شکل دے گی:وزیراعظم
08 اپریل 2015 (11:03)
0

 وزیراعظم محمد نوازشریف نے کہاہے کہ حکومت پارلیمنٹ کے فیصلے کے مطابق یمن کے مسئلے پر اپنی پالیسی کو حتمی شکل دے گی۔اسلام آباد میں پارلیمنٹ کے مشترکہ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم یمن کے بحران پر ایوان کی رہنمائی چاہتے ہیں اور اس کے فیصلے پر من وعن عمل کریں گے۔انہوں نے دوٹوک الفاظ میں کہا کہ حکومت نے ابھی تک اس معاملے پر کوئی فیصلہ نہیں کیا ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ حکومت ایوان کے ارکان کی تجاویز کا سنجیدگی سے جائزہ لے رہی ہے اور ان کی سفارشات کو یمن کے بارے میں اپنی پالیسی کا حصہ بنائے گی۔انہوں نے کہا کہ پارلیمنٹ کے علاوہ حکومت اس معاملے پر فوج سے بھی رابطے میں ہے۔وزیراعظم نے کہا کہ حکومت پارلیمنٹ سے کوئی حقائق نہیں چھپائے گی۔نوازشریف نے کہا کہ حکومت ترک قیادت کے ایران اورسعودی عرب کی قیادت سے ملاقاتوں سے متعلق جواب کی منتظر ہے۔


انہوں نے کہا کہ پاکستان ترکی کے ساتھ مل کر انڈونیشیا اور ملائیشیا کے ساتھ بھی مشاورت کرے گا تاکہ یمن میں جاری کشیدگی کے خاتمے کا حل تلاش کیا جاسکے۔