Friday, 18 October 2019, 11:13:49 am
مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کا عالمی دن یوم سیاہ کے طور پر منانے کیلئے پیر کو مکمل ہڑتال کی اپیل
December 08, 2018

مقبوضہ کشمیر میں مشترکہ حریت قیادت نے 10 دسمبر بروز پیر انسانی حقوق کے عالمی دن کو یوم سیاہ کے طور پر منانے کے لیے مقبوضہ علاقے میں ہڑتال کی اپیل کی ہے۔ہڑتال کا مقصد عالمی برادری کی توجہ بھارتی فوجیوں کی طرف سے علاقے میں جاری انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کی طرف مبذول کرانا ہے۔

کشمیر میڈیاسروس کے مطابق سید علی گیلانی ، میر واعظ عمر فاروق اور محمد یاسین ملک پر مشتمل مشترکہ حریت قیادت نے آج سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ مقبوضہ کشمیر دنیا کا ایسا علاقہ ہے جہاں سب سے زیادہ فوجی تعینات ہیں جہاں بھارتی فوجیوں نے زندہ رہنے کے حق سمیت لوگوں کے تمام حقوق سلب کر رکھے ہیں ۔

رہنمائوں نے کہا کہ قتل، گرفتاریاں، پابندیاں، ہراساں کرنے کی کارروائیاں اور دیگر مظالم بھارتی فوجیوں کا روز کا معمول بن چکا ہے۔ مشترکہ قیادت نے افسوس ظاہر کیا کہ قابض انتظامیہ نے انسانی حقوق کے ہفتے کے سلسلے میں قیادت کی طرف سے اعلان کر د ہ پر امن دھرنوں اور مشعل بردار جلوسوں کو روکنے کیلئے طاقت کا وحشیانہ استعمال کیا اور حریت رہنمائوں اور کارکنوں کو نظر بند کردیا۔

رہنمائوں نے انسانی حقوق کے عالمی اداروں سے اپیل کی کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں انسانی حقوق کی ابتر صورتحال کا نوٹس لیں اور بھارت پر دبائو ڈالیں کہ وہ مقبوضہ کشمیر میں ریاستی دہشت گردی بند کرے۔

جموںوکشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک نے سرینگر میں جاری ایک بیان میں کہا کہ بھارت نے ایک عرصے سے کشمیریوں کا حق خود ارادیت دبا رکھا ہے اور وہ انکی آواز کو دبانے کیلئے فوجی طاقت کا بے دریغ استعمال کر رہا ہے۔

ادھر کشمیر ٹرانسپورٹرز ویلفیئر فیڈریشن نے ہفتہ انسانی حقوق کے سلسلے میں علاقے میں جاری بھارتی مظالم کے خلاف آج پرتاپ پارک سرینگر میں پرامن احتجاجی مظاہرہ کیا۔