Wednesday, 14 November 2018, 10:12:54 pm
پاکستان،جاپان کا دو طرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے عزم کا اعادہ
November 08, 2018

پاکستان اور جاپان نے اپنی شراکت داری کو نئی بلندیوں پرپہنچانے کیلئے اپنے دوطرفہ تعلقات کو مزید مضبوط بنانے کے عزم کا اعادہ کیا ہے ۔اس عزم کااظہار آج ٹوکیو میں پاکستان اور جاپان کے درمیان دوطرفہ سیاسی مشاورت کے گیارہویں دور میں کیاگیا ۔سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے پاکستانی وفد کی جبکہ جاپان کے امور خارجہ کے سینئر نائب وزیر KAZUYUKI YAMAZAKI نے جاپانی وفد کی قیادت کی ۔مشاورتی مذاکرات نے دونوں فریقوں کو خصوصاً تجارت اور معیشت ، سرمایہ کاری ، عوامی سطح پر روابط ، انسانی وسائل کی ترقی اور تعلیم کے شعبوں میں تعاون کو مزید فروغ دینے کیلئے نئے امکانات تلاش کرنے کا اچھا موقع فراہم کیا ہے۔فریقین نے اپنے متعلقہ خطوں میں امن اور سلامتی کی صورتحال پر تبادلہ خیال کیا ۔سیکرٹری خارجہ نے افغانستان میں امن اور استحکام کے فروغ کیلئے پاکستان کی کوششوں کے بارے میں بتایا مذاکرات میں مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم اورانسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو بھی اجاگر کیاگیا۔اجاپان نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں پاکستان کی کوششوں کوسراہتے ہوئے سیکورٹی کی بہتر صورتحال کے حصول میں پاکستان کی کامیابی کا اعتراف کیا جس سے پاکستان میں سرمایہ کاری راغب کرنے کی حوصلہ افزائی ہوئی ہے ۔ سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے سیول میں اپنی جنوبی کوریا کی ہم منصب کانگ کیونگ WHA سے ملاقات کی جس میں مجموعی دوطرفہ تعلقات کا جائزہ لیاگیا ۔ فریقین نے تمام شعبوں خصوصاً تجارت، سرمایہ کاری، تعلیم اور ثقافت کے شعبوں اورپارلیمانی وفود کے تبادلوں کے امکاات تلاش کئے ۔ملاقات پاکستان اور جمہوری کوریا کے درمیان دوطرفہ پالیسی مشاورت کے دسویں دور سے قبل ہوئی ۔فریقین نے اقتصادی اصلاحات اور علاقائی امن اور سلامتی کے شعبوں میں قریبی تعاون کے قیام کیلئے کوریا اور پاکستان کے درمیان اعلی سطح کے وفود کے تبادلوں کی ضرورت پر اصولی طورر پر اتفاق کیا ۔پاکستان نے کوریا کی اقتصادی ترقی میں تعاون کیلئے پاکستان کو ترجیحی شراکت دار مقرر کرنے کا خیرمقدم کیا ۔ملاقات میں جنوبی ایشیاء اور جزیرہ نما کوریا میں علاقائی سلامتی کی صورتحال کابھی جائزہ لیاگیا پاکستان نے جنوبی ایشیاء میں قیام امن کیلئے مسئلہ کشمیر کے حل کی اہمیت پرزوردیا اورجنوبی کوریا نے جزیرہ نما کوریا سے متعلق امن معاہدے کے حوالے سے ہونے والی مثبت پیشرفت سے آگاہ کیا۔دوطرفہ پالیسی مشاورت کے دسویں دور نے مختلف شعبوں میں ہونے والی پیشرفت کاجائزہ لینے اوردونوں فریقوں کے درمیان مزید تعاون کی سمت کا تعین کرنے کا ایک پلیٹ فارم فراہم کیا ہے۔