افغانستان کی طرف سے ملک میں بدامنی کی صورتحال پیدا کرنے سے متعلق پاکستان اور اسکی ایجنسیوں پر لگائے گئے الزامات یکسر مسترد ۔

قومی سلامتی کمیٹی کا جارحیت کیخلاف بھرپور دفاع کے عزم کا اعادہ
07 جون 2017 (18:11)
0

پاکستان دشمن قوتوں کی تمام سازشوں اور جارحیت کے خلاف اپنا بھرپور دفاع کرے گا۔
اس عزم کااظہار وزیراعظم نوازشریف کے زیر صدارت آج اسلام آباد میں قومی سلامتی کمیٹی کے اجلاس میں کیاگیا۔
اجلاس نے افغانستان کی طرف سے ملک میں بدامنی کی صورتحال پیدا کرنے سے متعلق پاکستان اور اس کی ایجنسیوں پر لگائے گئے الزامات یکسر مسترد کردیئے۔
اجلاس میں کہاگیا کہ پاکستان نہ صرف پرامن اورمستحکم افغانستان کیلئے پرعزم ہے اور اس نے اس مقصد کیلئے تمام علاقائی اور عالمی اقدامات کئے ہیں۔
اجلاس میں کہا گیا کہ پاکستان افغانستان کے مسئلے میںشریک واحد ملک ہے جس نے محدود وسائل اور بڑے پیمانے پر جانی ومالی نقصان کے باوجود دہشتگردی کے خلاف واضح کامیابی حاصل کی ہے۔
اجلاس میں یہ بات بھی نوٹ کی گئی کہ پاکستان نے اس وقت بھی صبروتحمل کا مظاہرہ کیا جب افغانستان کی سرزمین پاکستان میں دہشتگردی کی کارروائیوں کیلئے استعمال کی گئی جس میں بڑے پیمانے پر جانی نقصان ہوا۔
وزیر دفاع خواجہ محمد آصف ، وزیرخزانہ اسحق ڈار ، وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان ، مشیر خارجہ سرتاج عزیز ، چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی جنرل زبیر محمود حیات ، بری فوج کے سربراہ جنرل قمر جاوید باجوہ ، فضائیہ کے سربراہ ائر چیف مارشل سہیل امان ، بحریہ کے سربراہ ایڈمرل محمد ذکااﷲ اور ڈی جی ، آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل نوید مختار نے اجلاس میں شرکت کی۔