امریکہ ، برطانیہ ، فرانس اور دیگر ایٹمی طاقتوں نے مذاکرات کا بائیکاٹ کرتے ہوئے اسے غیرحقیقت پسندانہ قرار دیا ہے۔

اقوام متحدہ میں آج129 ممالک ایٹمی ہتھیاروں پر پابندی کے معاہدے کی منظوری دیں گے
07 جولائی 2017 (12:41)
0

اقوام متحدہ میں آج ایک سو انتیس ممالک ایٹمی ہتھیاروں پر پابندی کے حوالے سے اپنی نوعیت کے پہلے معاہدے کی منظوری دیں گے ۔ ایٹمی ہتھیاروں کے حامل ممالک امریکہ ، برطانیہ ، فرانس اور دیگر ایٹمی طاقتوں نے مذاکرات کا بائیکاٹ کرتے ہوئے اسے غیرحقیقت پسندانہ قرار دیا ہے۔

ایٹمی طاقت کے حامل ملکوں نے کہا ہے کہ اس پابندی کے دنیا بھر کے پندرہ ہزار ایٹمی ہتھیاروں کے ذخائر میں کمی لانے پر اثرات مرتب نہیں ہوں گے ۔
اقوام متحدہ کی کانفرنس کے صدر Elayne Inhyte Gomaz نے معاہدے کو ایک تاریخی کامیابی قرار دیا ہے۔
آسٹریا ، برازیل ، میکسیکو ، جنوبی افریقہ اور نیوزی لینڈ کی قیادت میں ایک سو اکتالیس ملکوں نے معاہدے سے متعلق تین ہفتوں پر مشتمل مذاکرات میں حصہ لیا۔ یہ معاہدہ ایٹمی ہتھیار بنانے ، اس کو ذخیرہ کرنے یا ان کے استعمال کی دھمکیاں دینے پر مکمل پابندی کا مطالبہ کرتا ہے۔