Wednesday, 22 January 2020, 12:38:26 am
معمولی جرائم کے مرتکب افراد کی بحالی کے بارے میں آخرآپ کیا جانتے ہیں؟ سی جی ٹی این کی معروف میزبان لیو شین
December 07, 2019

انتہا پسندی کے خاتمے کا کیا اس سے بہتر کوئی اور طریقہ ہو سکتا ہے کہ اس میں ملوث افراد جو کہ اپنے کیے پر نادم ہوں اور وہ ہنر سیکھنا چاہ رہے ہوں۔ ان کی مدد کی جائے تاکہ وہ ایک معمول کی صاف ستھری زندگی گزار سکیں ؟ یہی وہ کام ہے کہ جو چین گزشتہ تین سال سے سنکیانگ میں کر رہا ہے۔ مگر امریکی ایوانِ نمائندگان نے حالیہ دنوں ویغور قومیت کے لیے چین کی پالیسی سے متعلق الزام تراشی کرتے ہوئے حقائق کے بر خلاف بل منظور کیا ہے۔یہ بالکل ایسے ہی ہے کہ جیسے امریکہ میں معمولی جرائم کا ارتکاب کرنے والوں پر لازم ہے کہ وہ اپنے عمل اور کردار میں بہتری کے لیے عوامی خدمت کریں گے ۔برطانیہ میں بھی جرائم سے باز رکھنے اور ان سے چھٹکارا پانے کے لیے اسی طرح کے بحالی پروگرامز ہیں ، تو پھر سنکیانگ میں بھی انسدادِ دہشت گردی و انتہا پسندی کے لیے بحالی کا طریقہ اختیار کیا گیا کہ جس سے وہ لوگ ناصرف ماضی کی غلطیوں سے سبق سیکھتے ہیں بلکہ آنے والی زندگی میں مثبت طور پر شامل ہونے کے لیے خود کو با صلاحیت بھی بناتے ہیں تو یہ غلط کیوں ؟ جب اصل گناہ گاروں اور منصوبہ سازوں کو قانون کے مطابق سزائیں دے دی گئی ہیں تو پھر وہ کہ جو ان کے پھیلائے گئے انتہا پسندانہ تصورات کے چنگل میں گرفتار تھے یا جن کو مجبوراً ان کا ساتھ دینا پڑا اور انہوں نے کسی جرم کا براہِ راست ارتکاب بھی نہیں کیا ، ان کو کس بات کی سزا؟ کیا ان کو تنہا چھوڑ دیا جائے کسی راہنمائی کے بغیر؟ جب کہ وہ اپنے کیے پر نادم بھی ہوں اور خود کو سنوارنے کے لیے تیار بھی ہوں۔ سنکیانگ میں قائم تعلیمی و تربیتی مراکز اس بات کا اصل حل فراہم کرتے ہیں۔ یہاں وہ صحیح اور غلط کا فرق سمجھتے ہیں ، قانون کے بارے میں جانتے ہیں، لسانی مہارتیں ، روزگار کے لیے ہنر سیکھتے ہیں تاکہ وہ ایک مطمئن اور آسودہ زندگی گزار سکیں۔انیس سو نوے سے دو ہزار سولہ کے اختتام تک سنکیانگ میں دہشت گردی کے ہزاروں واقعات ہوئے تھے جن میں سب سے ہولناک واقعہ پانچ جولائی دو ہزار نوکو پیش آیا تھا جب ارمچی میں ایک سو ستانوے افراد ہلاک اور سترہ سو سے زائد زخمی ہوئے تھے ۔ اب جب چین کی حکومت کی جانب سے بحالی کے اقدامات اٹھائے گئے ہیں اور یہاں زندگی معمول پر آرہی ہے تو نینسی پیلوسی اور ان جیسے سیاستدان اس پر غصے کا اظہار کر رہے ہیں ۔ کیا وہ جانتے ہیں کہ ان کے اپنے ملک میں ان کے اپنے شہری،ایسے ہی عمل کررہے ہیں۔ اب سوچیے کہ اگر چین ، امریکی طرزِ معاشرت پر تنقید کرتے ہوئے معمولی جرائم کرنے والے افراد کی بحالی کے لیے عوامی خدمت کے طریقہ کار کے خلاف ایسا ہی ایک قانون منظور کرے تو کیسا لگے گا؟ میرا سوال صرف یہ ہے کہ " بحالی " کے عمل میں غلط کیا ہے؟ صرف یہی کہ یہ عمل چین کر رہا ہے ؟