کلثوم پروین نے بجٹ تیاری کیلئے سخت محنت کرنے پر وزیر خزانہ اسحق ڈار اور ان کی ٹیم کو مبارکباد پیش کی۔

سینیٹ: بجلی کی تقسیم کے سلسلے میں کسی بھی صوبے سے امتیاز نہیں برتا جارہا
06 جون 2017 (14:38)
0

پانی و بجلی کے وزیر مملکت عابد شیر علی نے کہا ہے کہ بجلی کی تقسیم کے حوالے سے کسی صوبے کے ساتھ کوئی امتیاز نہیں برتا جارہا ۔وہ سینٹ میں خیبرپختونخوا میں بجلی کی کم فراہمی سے متعلق نعمان وزیر خٹک اوردوسرے ارکان کے توجہ دلائو نوٹس کاجواب دے رہے تھے۔وزیر مملکت نے کہا کہ وفاقی حکومت نے چکدرہ میں دو سو بیس کے وی کے گرڈ اسٹیشن کی تعمیر کی غرض سے چون کروڑ روپے جاری کردئیے تھے۔

انہوں نے کہا کہ خیبرپختونخوا حکومت نے اراضی کے حصول میں چار سال لگائے جس سے یہ منصوبہ تاخیر کا شکار ہوا انہوں نے کہا کہ چھ ہزار پانچ سو میگاواٹ اضافی بجلی قومی گرڈ میں شامل کی گئی ہے اور آنے والے دنوں میں مزید بجلی شامل کی جائے گی۔
ایک توجہ دلائو نوٹس کا جواب دیتے ہوئے عابد شیر علی نے کہا پچھلے چار سال کے دوران کنٹرول لائن پر بھارتی بلا اشتعال فائرنگ سے اب تک تقریباً 66 افراد شہید اور228 زخمی ہوئے ہیں۔چیئرمین نے معاملہ مزید غورکیلئے متعلقہ قائم کمیٹی کو بھیج دیا۔

ادھر سینٹ میں  آئندہ مالی سال کی بجٹ تجاویز پر بحث جاری ہے۔بحث میں حصہ لیتے ہوئے ثمینہ عابد نے کہا کہ بجٹ میں عام آدمی کو کوئی ریلیف نہیں دیاگیا انہوں نے کہا کہ بجٹ میں بچوں اورخواتین کی فلاح و بہبود کیلئے کوئی پروگرام نہیں دیاگیا۔ہری رام نے کہا کہ غیر مسلموں کیلئے پانچ فیصد کوٹے پر من وعن عملدرآمد نہیں کیا جارہا ۔
کلثوم پروین نے بجٹ تیاری کیلئے سخت محنت کرنے پر وزیر خزانہ اسحق ڈار اور ان کی ٹیم کو مبارکباد پیش کی ۔خالدہ پروین نے بجٹ کو لفظوں کاہیر پھیر قرار دیا۔