وزیر اطلاعات نے کہاہے کہ کراچی میں جرائم کی شرح میں نمایاں کمی ہوئی ہے۔

شدت پسندی کےخاتمے تک ملکرکام کرنے کی ضرورت ہے:پرویزرشید
06 جولائی 2015 (10:28)
0

وزیراطلاعات پرویزرشید نے کہا ہے کہ جمہوریت سے بہترکوئی نظام نہیں ہوسکتا کیونکہ انتخابات بیلٹ پیپر اورووٹ احتساب کا بہترین ذریعہ ہیں۔لاہورمیں صحافیوں سےگفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ملک میں جمہوریت نہ ہونے کی وجہ سے دہشتگردی ، شدت پسندی ، توانائی کے بحران اور خراب نظم ونسق نے جنم لیا۔وفاقی وزیرنے کہا کہ حکومت نے گزشتہ دو برسوں میں دہشتگردی کے خاتمے میں شاندار کامیابی حاصل کی ہے۔


تاہم انہوں نے کہا کہ معاشرے سے شدت پسند ذہنیت کا قلع قمع بھی دہشتگردی اور دہشتگردی کے ڈھانچے کے خاتمے کی طرح ضروری ہے۔وفاقی وزیر نے سکولوں، مدارس ، ریڈیو، ٹیلی وژن اور اخبارات پر زور دیا کہ وہ مل کر کام کریں تاکہ شدت پسندی کا خاتمہ کیا جاسکے۔کراچی کی صورتحال کے بارے میں پرویز رشید نے کہا کہ عوام ، صنعت کار ، تاجر اور شہری اس حقیقت کے گواہ ہیں کہ شہر میں جرائم کی شرح میں نمایاں کمی ہوئی ہے اور دوہزار تیرہ کے مقابلے میں امن وامان کی صورتحال میں کافی بہتری آئی ہے۔


انہوں نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب ملک سے دہشتگردی اوردہشتگرد تنظیموں کے مکمل خاتمے تک جاری رہے گا۔پرویزرشید نے کہا کہ وزیراعظم نے فاٹا میں اصلاحات کیلئے مشیرخارجہ سرتاج عزیز کی سربراہی میں ایک کمیٹی قائم کی ہے۔ایک سوال پر انہوں نے کہا کہ بھارتی حکومت کو اس حقیقت کا ادراک ہونا چاہئے کہ پاکستان کی طرح بھارت کیلئے بھی امن انتہائی ضروری ہے۔انہوں نے کہا کہ بھارت خطے میں امن کا خواہاں ہے تو اسے ماضی کی جنگوں سے سبق سیکھنا ہوگا۔