بھارتی پولیس کے سری نگراوربڈگام کے مختلف علاقوں میں مظاہروں کے لئے سڑکوں پر آنے والے افراد پر شدید لاٹھی چارج سے متعدد افراد زخمی ہو گئے ۔

مقبوضہ کشمیر میں بھارت کی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف مکمل ہڑتال
05 نومبر 2014 (12:22)
0

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کی جانب سے انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کے خلاف عالمی برادری کی توجہ مبذول کرانے کے لئے آج مکمل ہڑتال کی جارہی ہے ۔ہڑتال کی اپیل کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق اور کشمیری رہنما محمد یاسین ملک نے دی ۔

کٹھ پتلی انتظامیہ نے سری نگر میں کرفیو نافذ کر دیا ہے بھارتی پولیس نے Chattergam میں بھارتی فوج کے ہاتھوں دو شہریوں کی ہلاکت کے خلاف سری نگر اور بڈگام کے مختلف علاقوں میں بھارت مخالف مظاہروں کے لئے سڑکوں پر آنے والے افراد پر شدید لاٹھی چارج کیا جس سے متعدد افراد زخمی ہو گئے۔بھارتی پولیس نے لفر گام میں مظاہرین پر آنسو گیس پھینکی اور فائرنگ کی ۔


کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین میر واعظ عمر فاروق ، بزرگ حریت رہنما سید علی گیلانی اور دوسرے حریت رہنما ئوں نے بے گناہ شہریوں کی ہلاکت کو بھارت کی ریاستی دہشت گردی قرار دیا ۔

 

ادھر،کنٹرول لائن کے دونوں جانب اور دنیا بھر میں کشمیری کل یوم شہدائے جموں اس عزم کے ساتھ منائیں گے کہ وہ خودارادیت کے ناقابل تنسیخ حق کے حصول تک جدوجہد آزادی جاری رکھیں گے۔
1947 میں نومبر کے پہلے ہفتے کے دوران جموں کے مختلف علاقوں سے پاکستان ہجرت کرنے والے لاکھوں کشمیریوں کو مہاراجہ ہری سنگھ کی فوج ، بھارتی فوج اور ہندو انتہا پسندوں نے شہید کر دیا تھا۔