فاٹا کے ترقیاتی ادارے کے ترجمان نے ریڈیو پاکستان کو بتایا کہ اس مقصد کیلئے متعدد کمپنیوں کو لائسنس جاری کئے ہیں۔