File Photo

بھارت اقوام متحدہ کی قراردادوں کی قانونی حیثیت اور صداقت سے انکار نہیں کر سکتا:حریت کانفرنس
05 جنوری 2017 (21:44)
0

مقبوضہ کشمیرمیں کل جماعتی حریت کانفرنس کے چیئرمین سید علی گیلانی نے اور دیگر حریت رہنمائوں نے کہاہے کہ بھارت اقوام متحدہ کی قراردادوں کی قانونی حیثیت اور صداقت سے انکار نہیں کرسکتا کیونکہ وہ اس حقیقت کی شاہد ہیں کہ جموں وکشمیر کے سیاسی مستقبل کے بارے میں فیصلہ ہونا ابھی باقی ہے ۔
سرینگر میں ایک بیان میں انہوں نے افسوس ظاہر کیاکہ اقوا م متحدہ اس دیرینہ تنازعے کے حل کے سلسلے میں اپنی ذمہ داریاں پوری کرنے میں ناکام رہا ہے جس سے پورے خطے کے امن و سلامتی کو شدید خطرہ لاحق ہے ۔
حریت رہنمائوں یاسمین راجہ ، نعیم احمدخان ،فریدہ بہن جی ، فاروق احمد توحیدی ، فردوس احمد شاہ ، محمد رمضان خان ، امتیاز احمد ریشی اور فیروز احمدخان نے اپنے بیانات میں کہاکہ 5 جنوری1949 ء کو پاس کی گئی قرارداد سمیت اقوام متحدہ کی قراردادیں دیرینہ تنازعہ کشمیر کے حل کا بہترین حل فراہم کرتی ہیں۔
کشمیر ہائی کورٹ بارایسوسی ایشن نے سرینگر میں اپنے اجلاس میں اقوام متحدہ کے نئے سیکریٹری جنرل انتونیو گوتیرس پر زوردیا ہے کہ وہ کشمیر بارے عالمی ادارے کی قراردادوں پرعمل درآمد کرائیں تاکہ جنوبی ایشیاء میں امن و سلامتی کو یقینی بنایا جاسکے ۔