نواز شریف نے کہا کہ ہمارے دل کشمیری بھائیوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں ۔

کشمیر پاکستان کی شناخت کا لازمی حصہ ہے:وزیراعظم
05 جنوری 2017 (11:06)
0

وزیراعظم نواز شریف نے دوٹوک الفاظ میں کہا ہے کہ کشمیر پاکستان کی شناخت کا لازمی حصہ ہے۔ وہ جمعرات کے روز اسلام آباد میں کشمیر کے بارے میں دو روزہ بین الاقوامی پارلیمانی سیمینار کی افتتاحی نشست سے خطاب کر رہے تھے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے دل کشمیری بھائیوں کے ساتھ دھڑکتے ہیں ۔ ہم ایک دوسرے کے غم اور خوشیوں میں شریک ہوتے ہیں ،ہم ان کی خوشی کو اپنی خوشی اور ان کے دکھ کو اپنا دکھ سمجھتے ہیں۔

وزیراعظم نے وحشیانہ مظالم کے باوجود خودارادیت کے ناقابل تنسیخ حق کیلئے مسلسل جدوجہد کرنے پر کشمیری عوام کے عزم وحوصلے کو خراج تحسین پیش کیا۔ کشمیری نوجوان کشمیر کی تاریخ میں نیا باب رقم کر رہے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ جراتمند کشمیری رہنماء برہان وانی کی شہادت کے واقعہ نے تحریک آزادی کشمیر کو نئی جلاء بخشی ہے ۔ انہوں نے برہان وانی کی شہادت کے بعد احتجاج کے دوران بے گناہ کشمیری عوام پر بھارتی مظالم پر افسوس ظاہر کیا۔
اس موقع پر اظہار خیال کرتے ہوئے مشیر خارجہ سرتاج عزیز نے کہا کہ جموں وکشمیر کا مسئلہ عالمی عمل پر دھبہ ہے ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیر اور فلسطین اقوام متحدہ کی سلامتی کونسل کے ایجنڈ پر موجود سب سے دیرینہ تنازعے ہیں۔ مشیر خارجہ نے کہا کہ عالمی برادری اور بھارت کے بانی رہنماؤں کے وعدے کے باوجود کشمیری عوام کو حق خودارادیت نہ دئیے جانے سے ان کی مشکلات میں مزید اضافہ ہوا ہے۔

سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے قومی اسمبلی کے سپیکر سردار ایاز صادق نے کہا کہ پورے خطے کو مزید عدم استحکام کا شکار ہونے سے بچانے کیلئے کشمیر کے دیرینہ تنازعے کا فوری حل ناگزیر ہے۔ ایاز صادق نے کہا کہ گزشتہ سات دھائیوں سے بھارت کی قابض فوج کے ہاتھوں کشمیریوں کی مسلسل نسل کشی کے باعث آبادی اناسی فیصد سے کم ہو کر اڑسٹھ فیصد رہ گئی ہے۔