وفاقی وزیر نے کہا کہ صرف درآمدی اور پرتعیش اشیا پر اضافی ڈیوٹی عائد کی گئی ہے جو عام آدمی استعمال نہیں کرتے۔

ٹیکسوں کے نفاذ سے عام آدمی متاثر نہیں ہوگا:اسحاق ڈار
05 دسمبر 2015 (09:36)
0

وزیر خزانہ اسحاق ڈار نے کہا ہے کہ درآمدی اشیا پر اضافی ٹیکسوں کے نفاذ سے عام آدمی متاثر نہیں ہوگا۔

پاکستان ٹیلی ویژن سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ حکومت نے محصولات میں چالیس ارب روپے کی کم وصولی کو پورا کرنے کیلئے درست اقدامات کئے ہیں۔ وفاقی وزیر نے کہا کہ صرف درآمدی اور پرتعیش اشیا پر اضافی ڈیوٹی عائد کی گئی ہے جو عام آدمی استعمال نہیں کرتے۔

اسحاق ڈار نے وضاحت کی کہ حکومت نے صرف تین سو پچاس اشیا پر اضافی ریگولیٹری ڈیوٹی عائد کی ہے جو صرف امیر آدمی استعمال کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ درآمدی اشیا پر اضافی ٹیکسوں کے نفاذ سے زرمبادلہ کی بچت میں بھی مدد ملے گی۔ ایک سوال پر اسحاق ڈار نے کہا کہ د و سال میں ٹیکس دہندگان کی تعداد سات لاکھ سے بڑھ کر دس لاکھ ہوچکی ہے۔ انہوں نے کہا کہ اس سال نومبر میں ٹیکس وصولی میں اٹھائیس فیصد اضافہ ہوا ہے جو فیڈرل بورڈ آف ریونیو کی پوری ٹیم کی بڑی کامیابی ہے۔

انہوں نے کہا کہ آئندہ دو سال کے دوران حکومت ملک میں روزگار کے مواقع پیدا کرنے، صنعتی اور مجموعی قومی پیداوار میں اضافے پر خصوصی توجہ دے گی۔