فافین کی رپورٹ میں الیکشن ٹربیونلز کی کارروائی کی سست روی کو ہارنے والے امیدواروں کے رویے سے منسوب کیا ہے۔

05 اگست 2014 (21:59)
0

پاکستان تحریک انصاف کی انتالیس انتخابی عذرداریوں کے فیصلے میں کامیابی کی شرح صفر ہے اور اس بارے میں کوئی شواہد نہیں ہیں کہ الیکشن ٹربیونلز جانبدار ہیں۔ یہ بات فری اینڈ فئیر الیکشن نیٹ ورک کی طرف سے الیکشن کے بعد جاری کردہ رپورٹ میں کہی گئی ہے۔


رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ پاکستان تحریک انصاف کے امیدواروں کی طرف سے مجموعی طور پر اٹھاون درخواستیں دائر کی گئیں جن میں مختلف حلقوں میں قومی اور صوبائی اسمبلی کے انتخابات کو چیلنج کیا گیا تھا۔ ان میں سے الیکشن ٹربیونلز نے ستر فیصد عذرداریوں کا فیصلہ کیا ہے اور اب تک پاکستان تحریک انصاف کی کوئی درخواست کامیاب قرار نہیں دی گئی۔ اگر پاکستان تحریک انصاف کی باقی انیس درخواستوں پر اسکے حق میں فیصلہ ہوا تو اس سے مجموعی انتخابی نتائج پر کوئی اثر نہیں ہو گا۔


فافین کی رپورٹ میں مزید کہا گیا ہے کہ قومی اسمبلی کے حلقوں این اے 110 ، این اے 122 ، 123 اور این اے 154 کے انتخابی نتائج پہلے ہی کھولے جا چکے ہیں۔ یہ الیکشن ٹربیونل کی طرف سے عدالتی انکوائری کا معاملہ ہے اور الیکشن ٹربیونل ہی کسی بھی انتخابات کے متنازعہ نتائج کو نمٹانے کا واحد فورم ہے اور حکومت کا اس ضمن میں کوئی کردار نہیں ۔
فافین کی رپورٹ میں الیکشن ٹربیونلز کی کارروائی کی سست روی کو ہارنے والے امیدواروں کے رویے سے منسوب کیا ہے۔