سرمایہ کاری کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے نوازشریف نے کہا کہ ملکی معیشت مستحکم بنیادوں پر کھڑی ہے۔

پاکستان تیزی سے ترقی کی راہ پر گامزن ہے:وزیراعظم
04 نومبر 2015 (17:54)
0

وزیرا عظم محمد نواز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان تیزی سے ترقی کی راہ پر گامزن ہے اور روشن مستقبل کی جانب بڑھ رہا ہے۔
اسلام آباد میں سرمایہ کاروں کی بین الاقوامی کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم نے کہا کہ ملکی معیشت مستحکم بنیادوں پر کھڑی ہے اور ملک انتہا پسندی ،د ہشت گردی اور توانائی کی قلت کے مسائل سے بھی کامیابی کے ساتھ نمٹ رہا ہے۔
انہوں نے کہا کہ توانائی کے شعبے میں بڑے پیمانے پر سرمایہ کاری ہو رہی ہے اور جلد کئی نئے منصوبے شروع کئے جائیں گے۔
وزیراعظم نے کہا بجلی کے تین نئے منصوبے درآمد شدہ مائع قدرتی گیس کے ساتھ چلانے کے علاوہ شمسی توانائی \\\' پانی\\\' کوئلے اور جوہری توانائی سے بجلی پیدا کرنے کے منصوبے بھی شامل کیے جائیں گے۔
انہوں نے کہاکہ ان منصوبوں کی تکمیل سے ملک آئندہ عشرے کی بجلی کی ضروریات پوری کرنے کے قابل ہو جائے گا انہوں نے امید ظاہر کی کہ 2017 ء تک بجلی کی لوڈشیڈنگ ختم ہو جائے گی۔
انہوں نے روس کے ساتھ دو ارب روپے مالیت کے شمال جنوب گیس پائپ لائن منصوبے کا ذکر کرتے ہوئے کہا کہ اس کی تکمیل سے روزانہ بارہ لاکھ کیوبک فٹ گیس دستیاب ہوگی۔
انہوں نے کہا کہ ایک اور گیس پائپ لائن گوادر سے نواب شاہ تک تعمیر کی جائے گی اور ملکی صنعتی ضروریات پوری کرنے کیلئے مزید گیس درآمد کی جارہی ہے۔
وزیراعظم نے کہاکہ مالیاتی خسارہ آٹھ اعشاریہ آٹھ فیصد سے کم ہوکر پانچ فیصد تک آگیا ہے افراط زر دو فیصد سے کم ہے اور شرح منافع تاریخ کی کم ترین سطح پر ہے۔
انہوں نے کہا کہ آپریشن ضرب عضب کا میابی سے آگے بڑھ رہا ہے انہوں نے ملک کو انتہا پسندی اور دہشت گردی کے ناسور سے نجات دلانے کے اپنے عزم کا اعادہ کیا۔
انہوں نے کہا کہ پاکستان ہمسایہ ممالک سے اچھے تعلقات چاہتا اور علاقائی تجارت اور سرمایہ کاری میں اضافے کا خواہشمند ہے۔
انہوں نے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری روٹ پر پچیس صنعتی زون قائم کیے جائیں گے۔
انہوں نے کہا کہ چین ملک کے مختلف شعبوں میں چھیالیس ارب ڈالر کی سرمایہ کاری کررہا ہے۔

وزیر تجارت خرم دستگیرنے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ تھائی لینڈ اور ترکی کے ساتھ آزادانہ تجارتی معاہدوں کیلئے بات چیت شروع ہوگئی ہے۔
انہوں نے کہا کہ چین کے ساتھ موجودہ آزادانہ تجارتی معاہدے کے مختلف پہلوئوں پر نظرثانی کے تناظر میں دوسرے معاہدے پر بھی بات چیت جاری ہے۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ وزیراعظم نوازشریف کی قیادت میں پاکستان نے اقتصادی سفارتکاری' بنیادی ڈھانچے' نئے معاہدوں اور جمہوری استحکام کے ذریعے دنیاکے ساتھ روابط کا سفر شروع کردیاہے۔ 

منصوبہ بندی کے وزیر احسن اقبال نے کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ پاک چین اقتصادی راہداری سے پورے خطے کی تقدیر بدل جائے گی۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کی اسٹاک مارکیٹ میں تیزی کا رجحان ہے۔
وفاقی وزیر نے کہا کہ عالمی ذرائع ابلاغ نے پاکستان کو بہترین مواقع کا حامل ملک قرار دیا ہے۔