File Photo

عالمی سرمایہ کار پاکستان میں سرمایہ لگانے میں گہری دلچسپی ظاہر کررہے ہیں:وزیراعظم
04 جنوری 2017 (14:17)
0

وزیراعظم نوازشریف نے کہاہے کہ عالمی سرمایہ کار پاکستان میں سرمایہ لگانے میں گہری دلچسپی ظاہر کررہے ہیں جو ہماری کامیاب اقتصادی اور سرمایہ کار دوست پالیسیوں کا مظہر ہے۔

وہ بدھ کے روز اسلام آباد میں ایک اعلیٰ سطح کے اجلاس کی صدارت کررہے تھے جن میں انہیں چین پاکستان اقتصادی راہداری کے بارے میں مشترکہ تعاو ن کمیٹی کے حال ہی میں بیجنگ میں ہونیوالے چھٹے اجلاس میں پیشرفت کے بارے میں بریفنگ دی گئی۔  وزیراعظم کو بتایاگیا کہ300 میگاواٹ بجلی کی پیداوار کے منصوبے کے بارے میں معاہدے پر دستخط کئے ہیں جس پر عملدرآمد شروع ہوگا ، اجلاس میں گوادر کو پانی کی فراہمی کامنصوبہ صوبائی ہیڈ کوارٹرز میں ہسپتال، فنی تربیت کے ادارے اور ماس ٹرانزٹ ریلوے کا منصوبہ بھی زیرغور آیا۔
وزیراعظم نے وزارت پانی و بجلی کو ڈیڑھ ارب ڈالر مالیت کے لاہور مٹیاری ترسیلی لائن منصوبے کا معاہدہ کرنے پرمبارکباد دی اور اس پر بھرپور طریقے سے عملدرآمد کی ہدایت کی جس کے لئے چین پاکستان اقتصادی راہداری کے تحت فنڈ فراہم کئے جائیں گے۔ انہوں نے اس منصوبے پر موثر انداز میں عملدرآمد کی ہدایت کی۔ وزیراعظم نے چاروں صوبوں میں ماس ٹرانزٹ منصوبوں کی شمولیت پر بھی پاکستانی ٹیم کومبارکبا د دیتے ہوئے وزیر ریلوے کو ہدایت کی کہ وہ منصوبے کے قابل عمل ہونے کی رپورٹوں کی تیاری کے لئے صوبوں کی وزارت کی طرف سے تکنیکی معاونت فراہم کریں۔
نوازشریف نے کہاکہ پاکستان کے پسماندہ علاقوں میں سرمایہ کاری کیلئے شاہراہوں کے منصوبے شروع کئے جائیں گے۔

وزیراعظم نے صنعتی پارکوں کے قیام سے متعلق وفاقی انتظامیہ کومجوزہ علاقوں میں بجلی و گیس اور مواصلات کی سہولت کی فراہمی کا عمل شروع کرنے کی ہدایت کی۔
وزیراعظم نے صوبوں کو چین پاکستان اقتصادی راہداری کے منصوبوں میں شامل کرنے کے عمل کو سراہا اورکہاکہ یہ انتہائی ضروری ہے تاکہ ان منصوبوں کے ثمرات وفاق کی تمام اکائیوں میں مساوی طور پر تقسیم ہوں۔
اجلاس میں وزیرخزانہ اسحق ڈار اورپانی و بجلی کے وزیر خواجہ محمد آصف، منصوبہ بندی ترقی اور اصلاحات کے وزیر احسن اقبال ، معاون خصوصی طارق فاطمی ، وزیراعظم کے سیکرٹری فواد حسین فواد اور دوسرے اعلیٰ حکام نے شرکت کی۔