ملک کی ترقی کیلئے نئے جذبے کے ساتھ کام کیا جائے گا:وزیراعظم
04 اگست 2016 (21:08)
0

وزیراعظم نواز شریف نے اپنی حکومت کے اس عزم کا اظہار کیا ہے کہ اگلے دو سال کے دوران عوام کی فلاح و بہبود اور ملک کی ترقی کیلئے نئے جذبے کے ساتھ کام کیا جائے گا۔ جمعرات کے روز اسلام آباد میں پاکستان مسلم لیگ (ن) کی پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے انہوں نے اپنی مدت کے دوران کام کی رفتار تیز کرنے کی ہدایت کی۔ 

وزیراعظم نے کہا کہ ریکارڈ سے یہ بات ظاہر ہوتی ہے کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) ترقی کی سیاست کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ عوام یہ بات بخوبی جانتے ہیں کہ کون ترقی کی اور کون انتشار کی سیاست کررہا ہے۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان مسلم لیگ (ن) نے آزاد جموں و کشمیر میں ہونے والے حالیہ انتخابات میں تاریخی کامیابی حاصل کی ہے۔
وزیراعظم نے کہا کہ اس سے پہلے بھی گلگت بلتستان اور بلدیاتی انتخابات میں عوام نے پاکستان مسلم لیگ (ن) اور اس کی قیادت پر اعتماد کااظہار کیا تھا۔ انہوں نے کہا کہ جب ہم 2013 ء میں اقتدار میں آئے تو ہمارے سامنے دہشت گردی کا خاتمہ' معیشت کی بہتری اور توانائی کے بحران پر قابو پانے جیسے تین بڑے چیلنج تھے۔ انہوں نے کہا کہ دہشت گردی پر بڑے پیمانے پر قابو پالیا گیا ہے اور آپریشن ضرب عضب کے ذریعے دہشت گردوں کی کمر توڑ دی گئی ہے۔ انہوں نے کہاکہ حکومت کی مربوط پالیسیوں کے نتیجے میں پاکستان ابھرتی ہوئی معیشتوں میں شامل ہوگیاہے جس کا اعتراف عالمی مالیاتی اداروںاور درجہ بندی کرنے والے اداروں نے بھی کیا ہے۔
نواز شریف نے کہا کہ زرمبادلہ کے ذخائرریکارڈ سطح تک پہنچ گئے ہیں اور جن لوگوںنے ماضی میں اپنا سرمایہ نکال لیا تھا وہ اب پاکستان میں دوبارہ سرمایہ کاری کررہے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ حکومت کے اقدامات کے نتیجے میں بلوچستان اور کراچی کی صورتحال میں نمایاں بہتری آئی ہے۔ انہوں نے کہا کہ وفاقی حکومت نے اسلام آباد' لاہور اور ملتان میں میٹرو بس منصوبوں کی طرز پر کراچی میں گرین لائن منصوبہ شروع کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ بلوچستان ترقی کی شاہراہ پر گامزن ہے اور صوبے کو چین پاکستان اقتصادی راہداری سے انتہائی فائدہ ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان نے آئی ایم ایف کا پروگرام مکمل کرلیا ہے انہوں نے یقین ظاہر کیا کہ ملک کومالیاتی اداروں سے مزید نئے قرضے لینے کی ضرورت نہیں ہوگی۔
نوازشریف نے کہا کہ حکومت کے خلاف بدعنوانی اور کمیشن لینے کے کوئی الزامات نہیں ہیں بلکہ اس نے توانائی کے منصوبوں کی تکمیل میں ایک سو ارب روپے کی بچت کی ہے۔ وزیراعظم نے کہا کہ حکومت نے موٹروے اور ایکسپریس وے کے کئی منصوبے شروع کیے ہیں جن سے ملک کے ہر علاقے کو فائدہ ہوگا۔