وزیر داخلہ نے کہا کہ چیئر مین کی حیثیت سے کانفرنس میں پاکستان کا موقف واضح طور پر پیش کیا گیا۔

File photo

سارک کانفرنس مجموعی طور پر خوشگوار ماحول میں ختم ہوئی:نثار
04 اگست 2016 (20:28)
0

چوہدری نثار علی خان نے جمعرات کے روز اسلام آباد میں صحافیوں سے باتیں کرتے ہوئے کہا کہ سارک وزراء داخلہ کی کانفرنس مجموعی طور پر خوشگوار ماحول میں ختم ہوئی اور اگلی کانفرنس سری لنکا میں ہوگی۔ انہوں نے کہا کہ چیئر مین کی حیثیت سے کانفرنس میں پاکستان کا موقف واضح طور پر پیش کیا گیا اور پاکستان نے کسی ملک کے ساتھ مذاکرات کے دروازے کبھی بند نہیں کیے۔

بھارتی مقبوضہ کشمیر میں بھارت کے حالیہ وحشیانہ مظالم کا حوالہ دیتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کوئی بھی ملک آزادی تحریکوں کو دہشت گردی کے نام پر دبا نہیں سکتا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان باہمی احترام اور وقار کی بنیاد پر کسی بھی مذاکراتی عمل میں شامل ہونے کے لیے تیار ہے۔  انہوں نے سارک ممالک کی توجہ کشمیر میں نہتے شہریوں کے خلاف طاقت کے وحشیانہ استعمال کی طرف مبذول کرائی۔ انہوں نے کہا کہ عوام کے بنیادی انسانی حقوق کا احترام ضروری ہے اور منصفانہ جدوجہد آزادی کو دہشت گردی کے خلاف جنگ کے نام پر نہ دبایا جائے۔