نوازشریف نے کہا ہے کہ پاکستان نے قومی سطح پر آپریشن ضرب عضب اور نیشنل ایکشن پلان پر موثر عملدرآمد کے ذریعے دہشتگردی کے خلاف نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں۔

پاکستان دہشتگردی اور بدعنوانی سے نمٹنے کیلئے سارک ملکوں کیساتھ مشترکہ طو رپرکام کرنے کیلئے پر عزم ہے:وزیراعظم
04 اگست 2016 (11:57)
0

وزیراعظم محمدنوازشریف نے واضح کیاہے کہ پاکستان دہشتگردی ، بدعنوانی اور منظم جرائم سے نمٹنے کے لئے سارک کے رکن ملکوں کے ساتھ مشترکہ طو رپرکام کرنے کے لئے پر عزم ہے ۔وہ آج صبح اسلام آباد میں سارک وزرائے داخلہ کانفرنس کی افتتاحی نشست سے خطاب کررہے تھے ۔ وزیراعظم نے کہاکہ پاکستان نے قومی سطح پر آپریشن ضرب عضب اور نیشنل ایکشن پلان پر موثر عملدرآمد کے ذریعے دہشتگردی کے خلاف نمایاں کامیابیاں حاصل کی ہیں جو اپنی سرزمین سے دہشتگردی کے ہمیشہ کے لئے خاتمے کے حوالے سے حکومت کے عزم کا مظہر ہیں ۔

وزیراعظم نے کہاکہ پاکستان سمجھتاہے کہ خطے کی ترقی اور خوشحالی کیلئے روابط ناگزیز ہیں اور وہ خطے میں زمینی فضائی اور آبی رابطوں کی اصولی طور پر حمایت کرتاہے ۔نوازشریف نے کہاہے کہ سارک کے منشور میں شامل اہداف اور مقاصد کو عملی جامہ پہنانا ہماری اجتماعی ذمہ داری ہے ۔

انہوں نے کہاکہ سارک خطہ بے پناہ انسانی اور قدرتی وسائل سے مالا مال ہے اس لئے سارک کو خطے کی صلاحیت ، اپنے لوگوں کی خوشحالی اور امن کے لئے بروئے کار لانے کے لئے ایک پلیٹ فارم فراہم کرنا چاہئے ۔

نوازشریف نے کہاکہ یہ سوچ ترقی ، امن اور پر امن ہمسائیگی کے حوالے سے ن کی حکومت کے نصب العین کا حصہ ہے ۔انہوں نے کہاکہ پاکستان نے سارک کے منشورمیں شامل اہداف کے حصول کے لئے تنظیم کی طرف سے کئے گئے اقدامات کی ہمیشہ حمایت کی ہے ۔انہو ں نے کہاکہ پاکستان مقامی وسائل کے تبادلے کے ذریعے توانائی کاتحفظ یقینی بنانے کے لئے علاقائی کوششیں تیز کرنے کا حامی ہے ۔

اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے سارک کے سیکرٹری جنرل ارجن بہادر تھاپا نے کہاکہ منشیات ، دہشتگردی ، سائبر کرائم اور منظم جرائم کے خاتمے کے لئے موثر اقدامات کی ضرورت ہے۔انہوں نے کہاکہ ساتویں سارک اجلاس میں گزشتہ اجلاسوں میں کئے گئے فیصلوں پر پیش رفت کا جائزہ لیاجائیگا۔انہوں نے سارک کے وزرائے داخلہ کے اجلاس کے لئے شاندار اقدامات کرنے پر پاکستان کو سراہا۔