چین کے نائب ایگزیکٹو وزیراعظم نے کہاکہ ان کا ملک خطے کے امن اور پاکستان کو درپیش مسائل سے نمٹنے کیلئے اس کے ساتھ ملکر کام کرے گا۔

پاک چین اقتصادی راہداری کے تحت چین کا عزم قابل ستائش ہے:صدر
03 ستمبر 2015 (10:27)
0

صدرممنون حسین نے جمعرات کو بیجنگ میں دوسرے عالمی رہنمائوں کے ہمراہ دوسری جنگ عظیم کے سترسال مکمل ہونے کی تقریبات میں چین کی بڑی فوجی پریڈ میں شرکت کی۔  چینی صدر شی چن پنگ اور خاتون اول میڈم پنگ لی یوان نے تاریخی TIANANMEN سکوائر میں صدر ممنون حسین اور بیگم محمودہ ممنون کا استقبال کیا۔  جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی کے چیئرمین جنرل راشد محمود نے بھی پریڈ دیکھی۔

صدر شی نے اپنے خطاب میں کہاکہ چین امن پسند ملک ہے اور دنیا کی سب سے بڑی فوج ہونے کے باوجود اس کی کسی سے مخاصمت نہیں انہوں نے کہاکہ چین اپنے فوجیوں کی تعداد میں تین لاکھ تک کمی کرے گا۔  پریڈ کے اختتام پر صدرشی چن پنگ اوران کی اہلیہ نے گریٹ ہال آف پیپل میں سربراہان مملکت اور حکومتوں کے نمائندوں کے اعزاز میں استقبالیہ دیا۔
صدر ممنون اور بیگم محمودہ ممنون نے بھی استقبالیے میں شرکت کی۔

ادھر صدر ممنون حسین اور چینی وزیراعظم کے نائب ایگزیکٹو ژانگ گائولی نے بیجنگ میں ملاقات کی اور دوطرفہ تعلقات اور باہمی دلچسپی کے امور پر تبادلہ خیال کیا۔

اس موقع پر صدر نے کہاکہ پاک چین اقتصادی راہداری کے تحت منصوبوں کی تکمیل کیلئے چین کا عزم قابل ستائش ہے۔  انہوں نے کہاکہ پاک چین اقتصادی راہداری پورے خطے کیلئے اہمیت کی حامل ہے۔

چین کے نائب ایگزیکٹو وزیراعظم نے کہاکہ ان کا ملک خطے کے امن اور پاکستان کو درپیش مسائل سے نمٹنے کیلئے اس کے ساتھ ملکر کام کرے گا۔  انہوں نے دوطرفہ تعلقات مزید مضبوط بنانے کیلئے صدر ممنون حسین کی کوششوں کی تعریف کی انہوں نے کہاکہ پاکستان اور چین آزمودہ دوست ہیں۔