نوازشریف کواجلاس میںبین الاقوامی اور علاقائی دونوں سطحوں پر اس طرح کے نظام کی کامیابی کے بارے میںبریفنگ دی گئی۔

وزیراعظم کا تنازعات کے حل کے متبادل نظام میں اصلاحات کی ضرورت پر زور
03 اکتوبر 2014 (15:26)
0

وزیراعظم محمد نواز شریف نے عدالتوں پر بوجھ کم کرنے کیلئے تنازعات کے حل کے متبادل نظام میں اصلاحات کی ضرورت پر زور دیا ہے۔انہوں نے ان خیالات کا اظہار آج اسلام آباد میں ایک اجلاس کی صدارت کرتے ہوئے کیا جس میں تنازعات کے حل کے موثر متبادل نظام کی عدم موجودگی کے باعث عام آدمی کو درپیش مشکلات کا جائزہ لیا گیا۔وزیراعظم کوبین الاقوامی اور علاقائی دونوں سطحوں پر اس طرح کے نظام کی کامیابی کے بارے میںبریفنگ دی گئی۔

نواز شریف نے کہا کہ تنازعات کے حل کا یہ نظام موجودہ عدالتی نظام کیلئے مددگار ہے اورجس سے عدلیہ کو فوجداری اور دوسرے سنگین جرائم پر توجہ مرکوز کرنے میں مدد ملے گی۔
وزیراعظم نے کہا کہ معاشرے میں دیہی علاقوں اور قصبوں سے اہلیت ، دانش اور شہرت کی بنیاد پر منتخب لوگوں کو بااختیار بنانا چاہئیے تاکہ وہ تنازعات کے حل کے متبادل نظام میں شامل ہو سکیں۔ان لوگوں کی شمولیت پر مبنی نظام ایسے تنازعات کو حل کرکے معاشرے میں ہم آہنگی پیدا کرے گا جن کے حل کیلئے لوگ کئی عشروں سے کوششیں کر رہے ہوتے ہیں۔


انہوں نے فوری طور پر تنازعات کے حل کے متبادل قانون کا ایسا مسودہ تیار کرنے کی ہدایت کی جسے سول سوسائٹی ، وکلاء برادری اور سیاسی جماعتوں کی جانب سے صوبائی اور قومی کانفرنسوں میں زیربحث لایا جائے گا۔