پیرس معاہدہ سے امریکہ کی علیحدگی ، ماحولیاتی منصوبوں کی عالمی کوششوں کو دھچکا لگا ہے:اقوام متحدہ
03 جون 2017 (10:06)
0

اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ امریکہ کی جانب سے ماحولیاتی تبدیلی کے پیرس معاہدہ کی علیحدگی سے زہریلی گیسوں کے اخراج میں کمی اور عالمی سلامتی کے فروغ کی بین الاقوامی کوششوں کو دھچکا لگا ہے۔سیکرٹری جنرل انتونیو گوٹریز کے ایک ترجمان نے نیو یارک میں صحافیوں کو بتایا کہ پیرس معاہدہ میں تمام ملکوں کیلئے ایک بامقصد لائحہ عمل موجود ہے۔

امریکہ نے ماحولیاتی تبدیلی کے عالمی معاہدے سے دستبردار کے اپنے فیصلے پر نکتہ چینی مسترد کر دی ہے۔وائٹ ہائوس کے حکام نے کہا کہ یورپ امریکہ سے معاہدے کا حصہ رہنے کا مطالبہ کر کے نہ صرف اس کی معیشت کو نقصان پہنچانے کی کوشش کر رہا ہے بلکہ ماحولیاتی تبدیلی کو ایک حقیقت تسلیم کرنے سے بھی انکاری ہے۔
پیرس معاہدے سے علیحدگی کے امریکی فیصلے پر دوسرے فریق ملکوں کے رہنماوں نے بھی کڑی تنقید کی ہے۔