صحافیوں سے گفتگو میں حسن نواز نے کہا کہ انہوں نے برطانیہ میں اپنے کاروبار سے متعلق تمام دستاویزات پیش کی ہیں ۔

ہم تمام سوالوں کا جواب دیں گے لیکن مقدمے میں انصاف ہونا چاہیے:حسن نواز
03 جولائی 2017 (15:20)
0

حسن نواز آج پانامہ پیپرز کے مقدمے کی تحقیقات کرنے والی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہوئے اور اپنا بیان قلمبند کرایا۔ حسن نواز کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے یہ تیسری پیشی تھی۔بعد میں صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے حسن نواز نے کہا کہ انہوں نے برطانیہ میں اپنے کاروبار سے متعلق تمام دستاویزات پیش کی ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ان دستاویزات میں ان کے بنک کھاتوں اور قرضوں سمیت تمام معلومات شامل ہیں۔
حسن نواز نے کہا کہ وہ گزشتہ پندرہ سال سے برطانیہ میں کاروبار کر رہے ہیں اور برطانوی حکام نے ان پر کسی غلط کام میں ملوث کا کوئی الزام نہیں لگایا۔
حسن نواز نے کہا کہ ہم تمام سوالوں کا جواب دیں گے لیکن مقدمے میں انصاف ہونا چاہئیے۔وزیر خزانہ اسحق ڈاربھی جے آئی ٹی میں پیش ہونے کیلئے فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی پہنچے ہیں۔
حسین نواز کل جبکہ مریم نواز بدھ کو مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پیش ہوں گی۔وزیراعظم نواز شریف ، پنجاب کے وزیراعلیٰ شہباز شریف مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے پہلے ہی اپنے بیانات قلمبند کرا چکے ہیں۔توقع ہے کہ مشترکہ تحقیقاتی ٹیم رواں ماہ کی دس تاریخ کو سپریم کورٹ میں اپنی حتمی رپورٹ پیش کرے گی۔

فیڈرل جوڈیشل اکیڈمی کے باہر صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے پاکستان مسلم لیگ نون کے سینئر رہنماء آصف کرمانی نے کہا کہ وزیراعظم کے خاندان نے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کے سامنے تصدیق شدہ دستاویزات پیش کی ہیں۔
انہوں نے کہا کہ جب تک قطری شہزادے کا بیان قلمبند نہیں کیا جاتا مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کی رپورٹ نامکمل رہے گی۔انہوں نے کہا کہ قطری شہزادے نے مشترکہ تحقیقاتی ٹیم کو بارہا اپنا بیان قلمبند کرانے کی دعوت دی ہے۔