مقبوضہ کشمیر:بھارتی پولیس نےحریت رہنمایاسین ملک کو متعدد رہنمائوں اورکارکنوں کے ہمراہ گرفتار کرلیا
02 اکتوبر 2015 (15:24)
0

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی پولیس نے جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے چیئرمین محمد یاسین ملک کو پارٹی کے متعدد رہنمائوں اورکارکنوں کے ہمراہ آج سری نگر سے گرفتار کرلیا ہے۔پولیس نے انہیں اس وقت حراست میں لیا جب وہ ضلع گاندر بل کے علاقے کنگن میں ایک عوامی اجتماع سے خطاب کرنے کیلئے جارہے تھے۔انہیں زکورہ پولیس اسٹیشن میں بند کیاگیا ہے۔


جموں و کشمیر لبریشن فرنٹ کے ترجمان نے محمد یاسین ملک اور دوسرے رہنمائوں کی گرفتار ی کی شدید مذمت کرتے ہوئے کہا کہ حریت پسند رہنمائوں کو نشانہ بنانے ریاستی دہشت گردی کی بد ترین مثال ہے۔ادھر کٹھ پتلی انتظامیہ نے بزرگ حریت رہنما سید علی گیلانی، شبیر احمد شاہ اور نعیم احمد خان کوسری نگر میں ان کے گھروں میں مسلسل نظر بند رکھا ہوا ہے۔

  ====================================

مقبوضہ کشمیر میں بھارتی پولیس نے دختران ملت کی چیئرپرسن آسیہ اندرابی کو سری نگر میں ضمانت پر رہائی کے بعد دوبارہ گرفتار کرلیا۔مقامی عدالت نے آسیہ اندرابی کی گزشتہ ماہ پاکستان میں ایک ریلی سے ٹیلیفون پر خطاب کرنے کے خلاف مقدمے میں ضمانت منظور کی لیکن انہیں دوبارہ حراست میں لے لیاگیا۔


ادھر دختران ملت کی ترجمان نے ایک بیان میں آسیہ اندرابی کی دوبارہ گرفتاری کی مذمت کرتے ہوئے کہا کہ کٹھ پتلی حکومت نے انہیں بلا جواز پابند سلاسل کررکھا ہے۔

  ====================================

 سینئر حریت رہنما آغاسید حسن الموسوی الصفوی نے کہا ہے کہ عوام کے درمیان اتحاد کو مضبوط کرکے کشمیر کی تحریک آزاد ی کو مزید تقویت دی جاسکتی ہے۔سری نگر میں ایک بیان میں انہوںنے کہا کہ تحریک آزادی کو اس کے منطقی انجام تک پہنچایا جائے گا۔

سینئر حریت رہنما نے کہا کہ بھارت کو یہ بات ذہن نشین کرلینی چاہیے کہ وہ اپنے ہمسائے پر شرائط مسلط نہیں کرسکتا اور ہٹ دھرمی سے خطے میں امن یقینی بنانے میں کوئی مدد نہیں ملے گی۔انہوں نے بھارت پر زوردیا کہ وہ مسئلہ کشمیر کو کشمیری عوام کی امنگوں کے مطابق حل کرنے کیلئے اقدامات کرے۔